پورے کرناٹک میں اس بارایک ہی دن منائی جائے گی عیدالاضحیٰ

عام طور پرریاست کے ساحلی علاقوں میں ایک دن پہلے اور دیگرعلاقوں میں ایک دن بعد عید منانے کا سلسلہ جاری تھا۔ لیکن اس مرتبہ پوری ریاست میں ایک بار عید منائی جائے گی۔

Aug 13, 2018 09:32 PM IST | Updated on: Aug 13, 2018 09:32 PM IST

ملک کے بیشتر حصوں میں عیدالاضحی22اگست کو منائی جائے گی۔ لیکن ذی الحجہ کے چاند کو لیکر اب بھی کئی جگہوں پر تعطل برقرارہے۔ ماہرفلکیات اوراسلامک اسکالرکہتے ہیں کہ قرآن نے چاند کی منزلیں طے کردی ہیں۔ لہٰذا رویت ہلال کے سلسلے میں کوئی تضاد اور کنفویزن پیدا نہیں ہوناچاہئے۔

پورے کرناٹک  میں اس مرتبہ ایک ہی دن یعنی22اگست کو عیدالاضحی منائی جائےگی۔عام طور پرریاست کے ساحلی علاقوں میں ایک دن پہلے اور دیگرعلاقوں میں ایک دن بعد عید منانے کا سلسلہ جاری تھا۔ لیکن اس مرتبہ بنگلورو کی مرکزی رویت ہلال کمیٹی نےتمل ناڈو میں ذی الحجہ کے چاند کی شہادت کی بنیاد پر22اگست کوعید الاضحیٰ منانےکااعلان کیاہے۔ کرناٹک کے امیرشریعت مولانا صغیراحمد رشادی کی صدارت میں ہوئی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیاگیا۔

پورے کرناٹک میں اس بارایک ہی دن منائی جائے گی عیدالاضحیٰ

Loading...

حال ہی میں بنگلوروکے دورے پرآئے لکشدیپ کے ماہرفلکیات شیخ علی مانِک فان کہتےہیں پوری دنیا میں مسلمان ایک ہی دن عید منائیں۔ مانک فان کہتےہیں کہ جس طرح جمعہ کی نماز ایک ہی دن ادا کی جاتی ہے، اُسی طرح عید بھی ایک ہی دن ہونی چاہئے۔ لیکن انگریزی کیلنڈر کے غلبہ کی وجہ سے لوگ قمری کیلنڈرناواقف ہوتےجارہاہے ہیں۔ اتنا ہی نہیں رویت ہلال کا گہرائی اورسنجیدگی کے ساتھ  مشاہدہ نہیں کیاجاتا۔ اس لئےبرصغیرمیں دویا تین دن تک عید منانےکا مسئلہ پیدا ہواہے۔ اسلامی اسکالرکہتےہیں کہ قرآن نے چاند کے مرحلے طئے کردئے ہیں۔ اس لحاظ سے لوگوں میں رویت ہلال کے متعلق کسی بھی طرح کا کنفیوزن نہیں ہوناچاہئے۔

کرناٹک کی مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے فیصلہ کے بعد ملک کی چند دیگر ریاستوں کی رویت کمیٹیوں نے23اگست کوعیدالاضحی منانےکااپنا فیصلہ واپس لیاہے۔ تقریباً  4 گھنٹہ تک ہوئی رویت ہلال کمیٹی کی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا۔ کرناٹک کے امیرشریعت مولانا صغیراحمد رشادی کی صدارت میں میٹںگ ہوئی۔ اس طرح کرناٹک، کیرلا، تمل ناڈو، تلنگانہ، آندھراپردیش، مہاراشٹر، مدھیہ پردیش، بہاراور اترپردیش وغیرہ میں بھی 22اگست بروزبُدھ کو عیدالاضحیٰ منائی جائے گی۔

 بنگلورو سےرؤف احمد ہلور کی خاص رپورٹ

 

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز