تلنگانہ میں فرقہ پرستی میں اضافہ ، مسلم پرنسپل کے ساتھ بدسلوکی ، خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی مطالبہ

Aug 16, 2017 08:26 PM IST | Updated on: Aug 16, 2017 08:26 PM IST

حیدرآباد: ایم اے فاروق احمد صدر تلنگانہ اسٹیٹ مائینارٹیز ایمپلائز سروس ایسوسی ایشن نے اس بات پر سخت فکر و تشویش کا اظہار کیا ہے کہ ریاست تلنگانہ میں فرقہ پرست عناصر کے حوصلے بلند ہوتے جارہے ہیں اور ان کی ہمتیں بڑھ گئی ہیں اور تلنگانہ کی مثالی تہذیب اور فرقہ وارانہ یکجہتی کو متاثر کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہو ں نے ایسوسی ایشن کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ضلع نظام آباد کے موضع لیلا پور ندی پیٹ میں واقع گورنمنٹ جونیئر کالج کے پرنسپل کے ساتھ بدسلوکی اور ان کی اہانت کا ایک بدبختانہ واقعہ پیش آیا ۔

یوم آزای کے موقعہ پر پرچم کشائی کے بعد بعض غیر متعلقہ افراد کالج میں داخل ہوئے اور انہو ں نے پرنسپل جناب یقین الدین کے ساتھ بد تمیزی کرتے ہوئے کہا کہ انہو ں نے جوتے پہن کر قومی پرچم لہرایا ہے اور اس طرح پرچم کی توہین کی ہے۔ جناب فاروق احمد نے کہا کہ جوتے پہن کر پرچم نہ لہرانے کی کوئی روایت نہیں ہے اور اس سے پرچم کی بے حرمتی نہیں ہوتی‘ لیکن ان عناصر نے اس پر شور و غل کرتے ہوئے فضا کو خراب کرنے کی کوشش کی اور بھارت ماتا کی جئے کے نعرے لگائے۔

تلنگانہ میں فرقہ پرستی میں اضافہ ، مسلم پرنسپل کے ساتھ بدسلوکی ، خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی مطالبہ

اتنا ہی نہیں ان افراد نے پرنسپل کو کالج کے باہر سڑک تک گھسیٹا اور ان کو سڑک پر بیٹھنے کے لئے مجبور کیا‘ اور ان پر بھارت ماتا کی جئے کا نعرہ لگانہ کے لئے دباؤ ڈالتے رہے اور کافی دیر تک ان کو پریشان و ہراساں کرتے رہے۔ یہ انتہائی شرمناک حرکت ہے ۔ تلنگانہ مائینارٹیز ایمپلائز سروس ایسوسی ایشن اس واقعہ کی سخت مذمت کرتی ہے اور مطالبہ کرتی ہے کہ خاطیوں کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے۔

فاروق احمد نے اجلاس کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ پرنسپل کا تعلق اقلیتی فرقہ سے ہونے کی وجہ سے ان کو ہراسانی اور بد تمیزی کا شکار بنایا گیا۔ جوتے پہن کر جھنڈا لہرانا قانونی جرم نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ خاطیوں کے خلاف کارروائی نہ کی گئی تو ان کے حوصلے بڑھیں گے اور دوسرے مقام پر بھی اس قسم کے واقعات ہوسکتے ہیں جو کہ ریاست کے لئے مثبت بات نہیں ہوگی۔ اس اجلاس کو ایم اے نعیم ورکنگ صدر‘ عبدالقدیر خان جنرل سکریٹری ‘ ڈاکٹر اے اے خان اسوسی ایٹ صدر‘ توفیق الرحمٰن ایڈیشنل جنرل سکریٹری ‘سید نعیم الدین ایڈیشنل جنرل سکریٹری‘ تاج الدین آرگنائزنگ سکریٹری ‘ محترمہ زبیدہ بیگم اور محترمہ رقیہ تسکین ویمنس سکریٹریزنے بھی مخاطب کیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز