پیغبمر اسلام کو بحیثت سیاستداں سمجھنا وقت کی اہم ضرورت: مولانا سجاد نعمانی

گلبرگہ۔ ملی رہنمائوں اور علمائے کرام کا کہنا ہے کہ پیغبمر اسلام کوبحیثت سیاستدان سمجھنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔

Sep 30, 2017 06:20 PM IST | Updated on: Sep 30, 2017 06:20 PM IST

گلبرگہ۔ ملی رہنمائوں اور علمائے کرام کا کہنا ہے کہ پیغبمر اسلام  کوبحیثت سیاستدان سمجھنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ علمائے کرام کا کہنا ہے کہ آپ  کی سیاسی بصیرت کی روشنی میں آج کے حالات کا مقابلہ کیا جا سکتا  ہے۔ علمائے کرام نے کہا کہ موجودہ حالات میں بھی مسلمانوں کو نا امید ہونے کی ضرورت نہیں ہے بلکہ حیات طیبہ کے مدنی دور کے ابتدائی ایام کو پیش نظر رکھ کر حکمت عملی بنا کرحالات کوموافق بنایا جا سکتا ہے۔ ہندوستان کے ذات پات کے نظام کو مدینہ کے قبائلی نظام  کے طور پر دیکھنے کی آج  ضرورت ہے ۔

 ’ موجودہ سیاسی صورتحال اور ہماری ذمہ داریوں‘ کے عنوان سے منعقد جلسے میں ممتاز عالم دین مولانا سجاد نعمانی اور دیگر ملی رہنمائوں نے خطاب کیا۔ مولانا نعمانی نے مسلمانوں  کو پیغمبر اسلام کی سیاسی بصیرت  کو سمجھنے پر زور دیا ۔ مولانا نعمانی نے ملک کے مسلمانوں کے موجودہ حالات کا تقابل رسول اقدس کے مدنی دور کے ابتدائی ایام سے کیا۔ مولانا نے کہا کہ آپ  نے مدینہ آنے کے بعد سب سے پہلا کام اہل قریش کے خلاف مدینے کے قبیلوں کو مذہب کے نام پرنہیں ظالم و مظلوم کےنام پر جمع کیا تھا۔ ملی رہنمائوں نے مسلمانوں کو مایوس نہ ہونے کا مشورہ دیا۔ ملی رہنمائوں نے کہا کہ ملک کے مسلمانوں کو اب منفی سیاست چھوڑ کر مثبت سیاست اپنانے کی ضرورت ہے۔

پیغبمر اسلام  کو بحیثت سیاستداں سمجھنا وقت کی اہم ضرورت:  مولانا سجاد نعمانی

مولانا سجاد نعمانی کے مطابق سیکولر وہم خیال افراد پر مشتمل الائنس فار پیس انڈ جسٹس کے قیام کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اس ضمن میں اکتوبر کے وسط میں ممبئی میں قومی سطح کے کنوینشن کے انعقاد پرغور کیا جا رہا ہے۔

ری کمنڈیڈ اسٹوریز