ششی کلا، دیناکرن کو اے آئی اے ڈی ایم کے سے الگ کیا گیا

Apr 19, 2017 10:35 AM IST | Updated on: Apr 19, 2017 10:35 AM IST

چنئی۔  تمل ناڈو کی حکمراں پارٹی آل انڈیا دراوڑ منیترکزگم (اے آئی اے ڈی ایم کے) میں جاری سیاسی واقعات میں ایک چونکانے والے فیصلے کے تحت پارٹی کی جنرل سیکرٹری ششی کلا، ان کے بھتیجے ٹی ٹی وی دیناکرن اور ان کے کنبہ کو پارٹی سے دور رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ وزیر اعلی پلانی سوامی سے ملاقات کے بعد ریاست کے وزیر خزانہ ڈی جے کمار نے کہا، "انہوں نے فیصلہ کیا ہے کہ اے آئی اے ڈی ایم کے قیادت کو دینا کرن اور ان کے کنبہ کے اثرات سے الگ کیا جائے گا"۔ انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ پارٹی عہدیداروں اور ممبران پارلیمنٹ سے صلاح و مشورہ کے بعد کیا گیا ہے۔ ریاست کے عوام بھی یہی چاہتے ہیں۔ ریاست کے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے وزیر منی کندن نے کہا، "ہم پارٹی میں اتحاد چاہتے ہیں، کوئی تقسیم نہیں۔

انہوں نے کہا کہ پارٹی کے دونوں گروپوں کے انضمام کی منصوبہ بندی کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو مسٹر پنیرسیلوم گروپ سے بات چیت کرے گی۔ ریاست کی سابق وزیر اعلی اور سیکرٹری جنرل  جے للتا کے انتقال کے بعد پارٹی دو گروپوں میں تقسیم ہو گئی ہے جس میں ششی کلا کے گروپ کا نام اے آئی اے ڈی ایم کے(اماں) اور پنیرسیلوم کے گروپ کا نام اے آئی اے ڈی ایم کے(پرچی تلیوی اماں) ہے۔

ششی کلا، دیناکرن کو اے آئی اے ڈی ایم کے سے الگ کیا گیا

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز