ایکسکلوزیو: پنيرسیلوم کی بغاوت کے پیچھے ڈی ایم کے، کسی بھی جانچ کا سامنا کرنے کو تیار: ششی کلا

Feb 08, 2017 08:48 PM IST | Updated on: Feb 08, 2017 08:48 PM IST

چنئی۔ تمل ناڈو کی سیاست میں گزشتہ 24 گھنٹے میں ڈرامائی واقعات ہوئے ہیں۔ او پنيرسیلوم نے باغی رخ اپناتے ہوئے پھر سے وزیر اعلی کے عہدے کی دعویداری ٹھونک دی ہے۔ انہوں نے جے للتا کی موت کی عدالتی تحقیقات کا حکم بھی دے دیا ہے۔ ان کے نشانے پر رہیں اے آئی اے ڈی ایم کے کی جنرل سکریٹری ششی کلا نٹراجن نے اس سیاسی بھونچال کے بعد پہلی بار نیٹ ورک 18 کو خصوصی انٹرویو دیا ہے۔ سیاسی اتھل پتھل کے بعد کسی بھی ٹی وی چینل کو دیا ان کا یہ پہلا انٹرویو ہے۔

پنيرسیلوم کے بعد اگلے وزیر اعلی کے سوال پر انہوں نے کہا کہ میں نے حکومت بنانے کے لئے گورنر کو تمام ضروری دستاویزات حوالے کر دیے ہیں۔ اس میں ضروری نہیں کہ تمام اراکین اسمبلی کے دستخط بھی ہوں۔ جے للتا کی موت پر اٹھ رہے سوالات پر ششی کلا نے کہا کہ میں جے للتا کی موت پر کسی بھی طرح کی جانچ کا سامنا کرنے کو تیار ہوں۔ پنيرسیلوم کی بغاوت کے سوال پر انہوں نے کہا کہ اس پوری سازش کے پیچھے ڈی ایم کے ہے۔ ان کی حمایت سے ہی پنيرسیلوم نے پارٹی سے بغاوت کی ہے۔ جے للتا جانتی تھیں کہ میں کون ہوں۔ مجھے اب کسی اور کو صفائی دینے کی ضرورت نہیں ہے۔

ایکسکلوزیو: پنيرسیلوم کی بغاوت کے پیچھے ڈی ایم کے، کسی بھی جانچ کا سامنا کرنے کو تیار: ششی کلا

واضح رہے کہ وزیر اعلی کے عہدے سے استعفی دے چکے پنيرسیلوم نے جے للتا کی موت کے معاملے میں تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔ اس معاملے کی تحقیقات ریٹائرڈ جج کی ایک ٹیم کرے گی۔ اس واقعے کے بعد پنيرسیلوم نے کہا کہ مجھے سمجھ میں نہیں آ رہا کہ ششی کلا وزیر اعلی بننے کے لئے اتنی جلد بازی میں کیوں ہیں؟ وہ تمل ناڈو کے سیاسی حالات بالکل نہیں سمجھتیں۔ جب آپ اقتدار کے لئے اتاولے ہوتے ہیں تو پھر ایسے خطرناک حالات کا پیدا ہونا فطری ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز