Live Results Assembly Elections 2018

تیلگودیشم کے رکن راجیہ سبھا سی ایم رمیش کے مکانات اور دفاتر پر آئی ٹی کے چھاپے

آندھراپردیش کی حکمران جماعت تلگودیشم کے رکن راجیہ سبھا سی ایم رمیش کے دفاتر پرآئی ٹی کے افسروں نے چھاپے مارے۔

Oct 12, 2018 01:04 PM IST | Updated on: Oct 12, 2018 01:05 PM IST

آندھراپردیش کی حکمران جماعت تیلگودیشم کے رکن راجیہ سبھا سی ایم رمیش کے دفاتر پرآئی ٹی کے افسروں نے چھاپے مارے۔ان کے آبائی ضلع کڑپہ کے ایرگنٹلہ منڈل کے پوٹلادُرتی میں واقع ان کے مکان سمیت حیدرآباد میں واقع مکان ،ان کی کمپنی کے دفاتر پر آئی ٹی کے 30افسروں نے چھاپے مارے۔ آج صبح تقریبا آٹھ بجے پوٹلادُرتی میں واقع ان کے مکان پر آئی ٹی کے 15افسر پہنچے ۔اس وقت مسٹررمیش کے بھائی سی ایم سریش ہی مکان میں موجود تھے۔افسروں نے ان کو مکان کے باہر کرکے دروازے لگادیئے ۔

آئی ٹی کے افسروں نے تمام کمروں کی تلاشی لی ۔بتایاجاتا ہے کہ بعض دستاویزات کی بھی افسروں نے جانچ کی۔ساتھ ہی حیدرآباد کے علاقہ جوبلی ہلز میں سی ایم رمیش کے مکان سمیت ان کے ادارہ رتویک پروجیکٹس پرائیویٹ لمیٹیڈ کے دفتر کی بھی تلاشی لی گئی۔

تیلگودیشم کے رکن راجیہ سبھا سی ایم رمیش کے مکانات اور دفاتر پر آئی ٹی کے چھاپے

تلگودیشم کے رکن راجیہ سبھا سی ایم رمیش کے مکانات اور دفاتر پر آئی ٹی کے چھاپے

ادھر مسٹر رمیش نے ان چھاپوں پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ ان کی جماعت تلگودیشم نے ریاست سے مرکز کی ناانصافی نے آوازاٹھائی تھی جس پر ان کو نشانہ بناتے ہوئے یہ کارروائی کی گئی۔وہ فی الحال دہلی میں ہیں۔

انہوں نے اس سلسلہ میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان چھاپوں کی شدید مذمت کی۔انہوں نے الزام لگایا کہ ان آئی ٹی چھاپوں میں مرکزی حکومت کا ہاتھ ہے۔انہوں نے کہاکہ آئی ٹی کے چھاپوں کے ذریعہ مرکزی حکومت انہیں ہراساں کرنے کی کوشش کر رہی ہے اور اے پی میں آنے والی سرمایہ کاری کو روکنے کے لئے یہ کوششیں مرکزی حکومت کی جانب سے کی جارہی ہیں۔ تاہم کسی بھی سازش کے باوجود اے پی کے مفادات پر کوئی مفاہمت نہیں کی جائے گی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز