امریکہ میں معمولی کہا سنی کے بعد تلنگانہ کے نوجوان مبین احمد کو گولی مار دی گئی، حالت نازک

Jun 08, 2017 08:18 PM IST | Updated on: Jun 08, 2017 08:22 PM IST

حیدرآباد: امریکہ میں نامعلوم حملہ آوروں کی طرف سے کی گئی فائرنگ میں تلنگانہ کا ایک نوجوان سنگین طور پر زخمی ہو گیا ہے۔ نوجوان کے خاندان نے جمعرات کو یہ معلومات دی۔ امریکہ کے کیلی فورنیا کے ایک اسٹور میں ملازم تلنگانہ کے ساگاریڈي ضلع کا رہنے والا مبین احمد (26) کے پیٹ میں دو گولیاں ماری گئیں۔ واقعہ چار جون کو پیش آیا، جبکہ ان کے کنبہ کو اس کی معلومات جمعرات کو ملی۔ ان کے اہل خانہ نے کہا کہ کچھ لوگ صارف کے بھیس میں اسٹور میں داخل اور معمولی کہا سنی کے بعد مبین کو گولی مار دی۔ زخمی مبین کو کیلی فورنیا کے ایک اسپتال میں داخل کرایا گیا، جہاں اس کی سرجری کی گئی۔

مبین احمد مولانا محمدسلیمان صوفی امیرتبلیغی جماعت ضلع میدک کے نواسے اور ملٹری انسٹی ٹیوٹ سکندرآباد میں خدمات انجام دینے والے مجیب احمدکے فرزند ہیں۔ مفتی محمداسلم سلطان قاسمی اور دیگر ارکان خاندان نے وزیرآبپاشی ہریش راو ‘رکن پارلیمنٹ میدک کے پربھاکر سے رجوع ہوکر امریکہ روانگی کے لئے ویزا اور دیگر امور کی جلد تکمیل کے لئے مدد طلب کی ۔

امریکہ میں معمولی کہا سنی کے بعد تلنگانہ کے نوجوان مبین احمد کو گولی مار دی گئی، حالت نازک

اس خصوص میں ان عوامی نمائندوں نے امریکی قونصلیٹ سے تحریری نمائندگی کرتے ہوئے مبین احمدکے والد مجیب احمد کو ویزا کی اجرائی کی نمائندگی کی ۔ جمعہ کی شام تک ویزا کی اجرائی متوقع ہے ۔مفتی محمداسلم سلطان قاسمی نے اپنے بھانجہ مبین احمد کی صحت یابی کے لئے دعا کی درخواست کی ۔

شکاگو میں رہنے والے اس کے رشتہ داراسپتال میں اس کی دیکھ بھال کر رہے ہیں۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے امریکہ میں واقع ہندوستانی سفارت خانے سے معاملہ پر رپورٹ طلب کی ہے۔خیال رہے کہ مبین احمد تعلیم مکمل کرنے کے بعد فروری 2015 میں امریکہ گیا تھا۔ وہ کیلی فورنیا کے مضافات میں ایک نجی اسٹور میں کام کر رہا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز