عثمانیہ یونیورسیٹی کے قدیم اردو لوگو کی بحالی کے اقدامات کئے جائیں گے: وائس چانسلر

Apr 04, 2017 11:05 AM IST | Updated on: Apr 04, 2017 11:06 AM IST

حیدرآباد ۔ شہر حیدرآباد کی باوقار عثمانیہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ایس رامچندرم نے عثمانیہ یونیورسٹی کے قدیم لوگو کی بحالی کے اقدامات کی  یقین دہانی کروائی ہے۔ یہ لوگو اردو زبان میں تھا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت سے نمائندگی کرتے ہوئے قدیم لوگو کو بحال کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ عثمانیہ یونیورسٹی کی صدی تقاریب کے سلسلہ میں پرانے لوگو کی بحالی کے لئے طلبہ کی جانب سے مطالبات سامنے آئے ہیں اور اس سلسلہ میں باضابطہ طورپر تحریک بھی شروع کی گئی ہے۔ 1950ء میں اس لوگو کو آندھرائی حکمرانوں کی جانب سے تبدیل کیا گیا تھا۔ تلنگانہ کو ریاست کا درجہ ملنے کے بعد سے اس قدیم لوگو کی بحالی کے مختلف گوشوں سے مطالبات سامنے آرہے ہیں۔ اسی ضمن  میں وائس چانسلر نے بتایا کہ یقینی طور پر اس پر غور کیا جائے گا اور تمام کی رائے حاصل کرتے ہوئے اس لوگو کو بحال کیا جائے گا۔

وائس چانسلر نے کہا کہ وہ خود بھی چاہتے ہیں کہ قدیم لوگو بحال ہو۔ اردو سے وہ کوئی امتیاز برتنا نہیں چاہتے۔ جلد بازی میں قدیم لوگو بحال کیا گیا تو اس سے مسئلہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اس قدیم لوگو کو 60 سال پہلے برخاست کیا گیا تھا۔ اس کی بحالی کی خواہش کی جارہی ہے جو اچھی علامت ہے۔ حکومت سے اس لوگو کو بحال کرنے کی نمائندگی کی جائے گی۔

عثمانیہ یونیورسیٹی کے قدیم اردو لوگو کی بحالی کے اقدامات کئے جائیں گے: وائس چانسلر

فائل فوٹو

انہوں نےمزید کہا کہ عثمانیہ یونیورسٹی کے ساتھ ساتھ اس کے قدیم ادارہ دائرۃ المعارف کے قیام کے بھی 100 سال مکمل ہورہے ہیں۔ اس ادارہ میں موجود قدیم نادر مخطوطات کے تحفظ کے لئے بھی اقدامات کئے جائیں گے۔ یہ ایک اچھا سنٹر ہے اور ایک اچھے مقصد سے اسے شروع کیا گیا تھا۔ دائرۃ المعارف میں کئی اصلاحات کی جائیں گی ۔اس سنٹر کے لئے مرکز اور تلنگانہ حکومت کی جانب سے فنڈس دیئے جاتے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز