گلبرگہ : اردو میڈیم اسکولوں کے لئے کوئی سبجیکٹ انسپکٹر اور بلاک ریسورس پرسن نہیں، مشکلات کا سامنا

Jan 10, 2018 07:54 PM IST | Updated on: Jan 10, 2018 07:54 PM IST

گلبرگہ : گلبرگہ محکمہ تعلیمات میں اردو میڈیم اسکولوں کو ایڈمنسٹریٹیو سطح پر کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ محکمہ تعلیمات گلبرگہ میں اردو میڈیم اسکولوں کے لئے نہ تو سبجیکٹ انسپکٹرس ہیں اور نہ ہی بلاک ریسورس پرسنس۔ حد تو یہ بھی ہے کہ پورے ضلع کیلئے صرف ایک ایجوکیشن کو آرڈنیٹر کی تقرری کی گئی ہے۔ ایسا نہیں کہ اساتذہ برادری نے اس جانب وزیروں اورحکومتوں کی توجہ نہیں دلائی۔ ماضی میں کئی مرتبہ توجہ دلانے کے باوجود بھی اردو والوں کو اب تک انصاف نہیں مل پایا ہے۔

ملک کے نقشہ میں گلبرگہ کو ایک اردو ضلع کے طور پردیکھا جاتا ہے۔ ضلع گلبرگہ میں سرکاری و غیرسرکاری کل ملا کر510 اردو اسکولس ہیں ، جن میں25 ہزار سے زائد طلبہ و طالبات زیر تعلیم اور چار ہزار سے زائد اردو اساتذہ برسر خدمت ہیں۔ لیکن اردو اسکولوں، ٹیچرس اور طلبہ کی اتنی بڑی تعداد ہونے کے باوجود محکمہ تعلیمات اردو میڈیم کے تئیں سوتیلا رویہ اختیار کئے ہوئے ہے۔ اردو میڈیم اسکولوں کو ایڈمنسٹریٹو سطح پرعملہ کی کمی کی وجہ سے کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

گلبرگہ : اردو میڈیم اسکولوں کے لئے کوئی سبجیکٹ انسپکٹر اور بلاک ریسورس پرسن نہیں، مشکلات کا سامنا

ضلع گلبرگہ کے آٹھ تعلقہ جات کی مناسبت سے محکمہ تعلیمات کے آٹھ بلاک چلتے ہیں۔ آٹھ بلاک ہونے کے باوجود بھی پورے ضلع کی نگرانی کےلئے صرف ایک ہی ایجوکیشن کوآرڈنیٹر کا تقرر کیا گیاہے۔ وہ بھی صرف اردو کے لئے نہیں بلکہ اردو سمیت تمام اقلیتی زبانوں کے لئے ہے ۔ تاہم ریاست کے وزیرتعلیم تنویرسیٹھ نے اس سلسلہ میں مناسب قدم اٹھانے کی یقین دہانی کرائی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز