مرکز اور ریاستی حکومت بنگال میں "مسلم دہشت گردی "کے خلاف کارروائی کرے : آر ایس ایس

Mar 19, 2017 04:52 PM IST | Updated on: Mar 19, 2017 04:52 PM IST

کوئمبٹور: راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) نے مرکز اور ریاستی حکومت سے مغربی بنگال میں بڑھتی ہوئی مسلم دہشت گردی کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ آر ایس ایس کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت اور جنرل سکریٹری سریش بھياجي جوشی کی موجودگی میں یہاں آج سے شروع ہونے والے آل انڈیا مجلس نمائندگان کے سہ روزہ اجلاس میں اس سلسلے میں ایک تجویز بھی منظور کی جائے گی۔ یونین کے جوائنٹ سکریٹری وی بھگيا نے اس بارے میں معلومات دیتے ہوئے کہا کہ اس تقریب میں ملک بھر سے 1400 نمائندے حصہ لے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پورے ملک میں اس سال 1000 شاخوں میں تربیتی پروگرام منعقد کئے گئے اور یہ سنگھ کی پیش رفت کو ظاہر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سہ روزہ اجلاس کے دوران سنگھ کے سامنے درپیش مسائل پر بحث ہوگی اور آر ایس ایس کے نمائندے اس پر اپنی رائے بھی دیں گے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ کیرالہ میں کوئی قانون و انتظام بحال نہیں ہے۔

مرکز اور ریاستی حکومت بنگال میں

پی ٹی آئی

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز