میانمار کے بعد اب سری لنکا میں بھی بودھوں کا مسلمانوں پر حملہ ، 62 مکانات اور درجنوں گاڑیاں نذر آتش

Nov 19, 2017 09:01 PM IST | Updated on: Nov 20, 2017 10:14 AM IST

کولمبو: میانمار میں روہنگیا کے مسلمانوں پر ظلم و بربریت کے بعد اب سری لنکا میں بھی انتہا پسند بودھوں کے ذریعہ مسلمانوں پر حملے کے واقعات سامنے آئے ہیں۔ خبروں کے مطابق بودھوں نے مسلم اقلیت پر حملہ کرکے متعدد مکانات، دکانوں اور گاڑیوں کو نذرآتش کردیا ۔ تاہم پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے 19 افراد کو گرفتار کرلیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سری لنکا کے جنوبی صوبے گال میں بدھ مت کے انتہاپسندوں نے اقلیتی مسلمانوں پر حملہ کردیا اور ان کے متعدد گھروں کو نذرآتش کردیا۔ علاوہ ازیں ان کی گاڑیوں اور دکانوں میں بھی آگ لگادی ۔ انتظامیہ کی جانب سے علاقہ میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے جبکہ فوج اور پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات کردی گئی ہے۔

میانمار کے بعد اب سری لنکا میں بھی بودھوں کا مسلمانوں پر حملہ ، 62 مکانات اور درجنوں گاڑیاں نذر آتش

حکام کے مطابق پرتشدد واقعات میں 62 مکانات، دکانوں اور 10 گاڑیوں کو نذرآتش کردیا گیا ہے ۔ان میں سے زیادہ تر املاک مسلمانوں کی ہیں جبکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کے پیش نظر صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک کرفیونافذ کیا گیا ہے۔

srilanka muslim attacked

وزیر قانون کا تشدد واقعات پر قابو پالینے کا دعوی

دریں اثنا سری لنکا کے وزیرقانون نے دعوی کیا ہے کہ مذہبی پرتشدد واقعات پر قابو پالیا گیا ہے اور کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کےلئے پولیس اور انسداد فسادات اسکواڈ کی اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے۔ پولیس نے اب تک 19 افراد کو نقض امن کے الزام میں گرفتار بھی کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز