مراکش میں امدادی خوراک کی تقسیم کے دوران بھگدڑ، 15ہلاک

Nov 20, 2017 01:58 PM IST | Updated on: Nov 20, 2017 01:58 PM IST

رباط ۔ مراکش میں امدادی خوراک کی تقسیم کے دوران بھگدڑ مچ جانے کے باعث 15افراد ہلاک، جبکہ متعدد زخمی ہوگئے۔ مراکش کے صوبے الصویرہ کے قصبے سیدی بولالام میں امدادی خوراک کی تقسیم کے دوران یہ سانحہ پیش آیا جس میں بعض اطلاعات کے مطابق 40 افراد زخمی ہوئے ہیں۔ مقامی میڈیا کے مطابق ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں زیادہ تعداد خواتین اور بزرگ افراد کی ہے۔سوشل میڈیا پر آنے والی واقعے کی تصاویر میں بھگدڑ کی جگہ پر بڑی تعداد میں خواتین کی لاشیں نظر آرہی ہیں۔

عینی شاہدین نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ اس غربت و افلاس کے مارے قصبے میں بھگدڑ کا واقعہ اس وقت پیش آیا جب مقامی مارکیٹ میں سالانہ امدادی خوراک تقسیم کی جارہی تھی۔

مراکش میں امدادی خوراک کی تقسیم کے دوران بھگدڑ، 15ہلاک

متاثرین میں زیادہ تر خواتین اور بوڑھے لوگ ہیں۔ فوٹو کریڈٹ بی بی سی۔

مراکشی وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ شاہ محمد ششم نے مقامی حکام کو ہدایات دی ہیں کہ زخمیوں کو طبی امداد سے لے کر تدفین کے اخراجات تک سرکاری خزانے سے ادا کیے جائیں۔ بھگدڑ مچنے کی وجوہات سامنے نہیں آئی ہیں، قیاس یہی کیا جارہا ہے کہ امداد کے لیے بڑی تعداد میں جمع ہونے والے افراد اس حادثے کا سبب بنے۔

شاہ محمد ششم نے گزشتہ ماہ ہی غربت سے لڑنے میں ناکام رہنے پر تعلیم، منصوبہ بندی، رہائش اور وزیر صحت کو برخاست کر دیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز