شام میں انخلا کرائے جانے والے لوگوں کے قافلے پرخودکش بم دھماکہ، 40 افراد ہلاک

Apr 16, 2017 09:08 AM IST | Updated on: Apr 16, 2017 09:08 AM IST

بیروت۔ شام کے رشيدین خطے میں حکومت کے کنٹرول والے علاقے سے بسوں کے ذریعہ انخلا کرائے جانے والے لوگوں کے قافلے پر خود کش کار بم دھماکے میں کم از کم 40 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ آبزرویٹری کے مطابق حکومت اور باغیوں کے قبضے والے علاقوں سے لوگوں کو ایک معاہدے کے تحت ہفتہ کو بسوں سے باہر نکالا جا رہا تھا تبھی وہاں پر کار بم دھماکہ ہو گیا جس میں کم از کم 40 افراد ہلاک اور بڑی تعداد میں لوگ زخمی ہو گئے۔ یہ خود کش کار بم دھماکہ تھا۔

آبزرویٹری کے مطابق دھماکہ حلب کے مضافات رشيدین میں ہوا۔ لوگ یہاں جمعہ سے ہی جانے کا انتظار کر رہے تھے۔ واقعہ کے بعد کئی زخمیوں کو ایمبولنس سے ہسپتال پہنچایا گیا۔

شام میں انخلا کرائے جانے والے لوگوں کے قافلے پرخودکش بم دھماکہ، 40 افراد ہلاک

تصویر: یو این آئی

قابل ذکر ہے کہ یہاں داعش کے قبضے والے علاقوں میں پھنسے لوگوں کوبحران سے نکالنے کے لیے چار شہروں کے لئے معاہدہ ہوا تھا۔ اس سے پہلے دسمبر میں پھنسے ہوئے لوگوں کو یہاں سے نکالنے کا منصوبہ ناکام ہو گیا تھا۔ اس وقت باغیوں نے لوگوں کو لے جانے والی بسوں میں آگ لگا دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز