Live Results Assembly Elections 2018

ایک اور شامی بچے کی تصویر نے دنیائے انسانیت کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا

ایلان کردی کے اس المناک واقعہ کے دو سال بعد اب ایک اور شامی بچہ کی تصویر نے دنیائے انسانیت کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے۔

Dec 21, 2017 12:33 PM IST | Updated on: Dec 21, 2017 12:34 PM IST

دمشق۔ سال 2015 میں ترکی کے ایک ساحل پر اوندھے منہ مردہ حالت میں پڑے ایک تین سالہ شامی بچے ایلان کردی کی تصویر جب دنیا بھر کے ذرائع ابلاغ میں شائع ہوئی تو اسے دیکھ کر پوری دنیائے انسانیت لرز گئی تھی ۔ ایلان کردی کے اس المناک واقعہ کے دو سال بعد اب ایک اور شامی بچہ کی تصویر نے دنیائے انسانیت کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے۔ شام میں صدر بشارالاسد کی فوج کے ذریعہ انسانی بستیوں پر کی گئی وحشیانہ بمباری کی ایک اور خطرناک تصویر سامنے آئی ہے۔ ایک آنکھ سے محروم دو مہینہ کے معصوم بچہ کی تصویر نے ہر آنکھ نم کردی۔

دمشق کے اطراف میں باغیوں کے زیرقبضہ علاقے جسے صدر بشار الاسد کی فوج نے طویل عرصے سے گھیر رکھا ہے، اس میں اس بچہ کی تصویر لوگوں کو درپیش مشکلات کی ایک علامت بن گئی ہے۔ کریم نامی یہ شیر خوار بچہ دو ماہ کا تھا جب گزشتہ جمعہ کو مشرقی غوطہ میں حکومتی افواج کی بمباری کے نتیجے میں اپنی ایک آنکھ سے محروم ہوگیا تھا، جبکہ اس حملے میں اس کی ماں ہلاک ہوگئی تھی۔ اس حملے سے بائیں آنکھ سے محرومی کے ساتھ ساتھ جزوی طور پر اس کی کھوپڑی بھی دب گئی تاہم یہ بچہ کرشماتی طور پر زندہ بچنے میں کامیاب رہا۔

ایک اور شامی بچے کی تصویر نے دنیائے انسانیت کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا

ایک آنکھ سے محروم کریم اپنے بہن بھائیوں کے ساتھ: تصویر، العربیہ ڈاٹ نیٹ۔

اس شامی بچے کی زخمی حالت میں تصویر انٹرنیٹ کے ذریعے منظرعام پر آئی ہے۔ اس کے بعد سے دنیا بھر سے بچے انٹرنیٹ پر اس کے ساتھ اظہار یک جہتی کررہے ہیں۔ وہ اپنی بائیں آنکھ پر ہاتھ رکھ کر بنائی گئی تصاویر سوشل میڈیا پر کریم کی تصویر کے ساتھ شئیر کررہے ہیں۔ سماجی کارکنوں اور سوشل میڈیا صارفین نے کریم کے ساتھ اظہار یکجہتی میں کئی ہیش ٹیگ شروع کئے ہیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز