افغانستان میں دو مساجد پر خودکش حملے، اب تک 72 لوگوں کی موت

Oct 21, 2017 10:09 AM IST | Updated on: Oct 21, 2017 10:09 AM IST

کابل۔ افغانستان میں د ومساجد پر ہوئے خود کش حملہ میں کم سے کم 72لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔ ایک سیکورٹی افسر نے بتایا کہ دہشت گردوں نے کل دو مساجد کو نشانہ بنایا۔ پہلا واقعہ راجدھانی کابل میں ایک شیعہ مسجد میں حملہ آور نے گھس کر فائرنگ شروع کردی اور اس کے بعد خود کو دھماکہ سے اڑا لیا۔

حملہ آور نے کابل کے مغربی ضلع دشت بارچی میں واقع امام زمان مسجد کو نشانہ بنایا اس وقت جمعہ کی نماز کیلئے بڑی تعداد میں لوگ وہاں اکٹھے تھے۔ ابھی تک کسی دہشت گرد گروپ نے اس دھماکے کی ذمہ داری نہیں لی ہے ،لیکن حال کے مہینوں میں اسلامک اسٹیٹ نے شیعہ فرقہ پر ہونے والے حملوں کی ذمہ داری لی ہے۔

افغانستان میں دو مساجد پر خودکش حملے، اب تک 72  لوگوں کی موت

حملہ آور نے کابل کے مغربی ضلع دشت بارچی میں واقع امام زمان مسجد کو نشانہ بنایا اس وقت جمعہ کی نماز کیلئے بڑی تعداد میں لوگ وہاں اکٹھے تھے۔

دوسرے واقعہ میں ایک خود کش حملہ آور نے صوبہ غور کے ایک مسجد میں گھس کر خود کو اڑا لیا جس میں 20افراد کی موت ہوگئی۔صوبہ غور کے پولیس ترجمان نے کہا کہ ایک مقامی لیڈر کو نشانہ بنا کر کئے گئے حملہ میں کم از کم 20افراد مارے گئے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز