امریکہ کے ورجینیا میں دو گروپوں کے درمیان جھڑپ ، تین افراد ہلاک ، کئی زخمی ، ایمرجنسی کا اعلان

Aug 13, 2017 10:12 AM IST | Updated on: Aug 13, 2017 10:12 AM IST

ورجینیا:  امریکہ کے ورجینیا میں ایک یادگار ہٹانے کے سلسلے میں قوم پرستوں اور مخالف مظاہرین کے درمیان جھڑپ میں کم از کم ایک شخص ہلاک اور 30 ​​دیگر زخمی ہو گئے وہیں فضائی افسران کے مطابق ورجینیا ریاستی پولیس کے ایک ہیلی کاپٹر کے گر کر تباہ ہوجانے سے دو دیگر لوگوں کی بھی موت ہو گئی۔ ورجینیا کے گورنر ٹیری میك اے یو لیففے نے بتایا کہ یہ ابھی تک واضح نہیں ہے کہ ہیلی کاپٹر پر تشدد جھڑپوں کی وجہ سے گر کر تباہ ہوا ہے یا دیگر وجہ سے۔ انہوں نے بتایا کہ واقعہ کے بعد علاقے میں ایمرجنسی کا اعلان کیا گیا ہے اور ریلی کو روک دیا گیا ہے۔ صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بھی واقعہ کی مذمت کی ہے۔

مسٹر میك اے یو لیففے نے پریس کانفرنس میں کہا، ’’میرے پاس تمام گورے نسل پرست اور نازیوں کے لئے ایک پیغام ہے۔ ہمارا پیغام انتہائی سادہ اور آسان ہے-’اپنے گھر جاؤ ‘۔ آپ سب کی یہاں کوئی ضرورت نہیں ہے۔ شرم کرو‘‘۔

امریکہ کے ورجینیا میں دو گروپوں کے درمیان جھڑپ ، تین افراد ہلاک ، کئی زخمی ، ایمرجنسی کا اعلان

چیرلوٹےسوللے پولیس کے سربراہ ال تھامس نے بتایا کہ پرتشدد جھڑپ کے دوران ایک 32 سالہ خاتون کی موت ہوئی ہے اور پانچ افراد کو شدید چوٹ لگی ہے وہیں کار چڑھائے جانے کی وجہ سے چار افراد شدید زخمی ہو گئے۔  انہوں نے بتایا کہ ریلی کے دوران ہجوم میں لوگوں کے اوپر کار چڑھانے والے ڈرائیور کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور پولیس اسے مجرمانہ قتل مان کر واقعہ کی تحقیقات کر رہی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ جمعہ کی رات کو سینکڑوں کی تعداد میں گورے لوگوں کی حمایت میں ہاتھوں میں ٹارچ لئے ایک دھڑے ورجینیا یونیورسٹی کے احاطے میں آ گیا اور ہفتہ کی صبح ان لوگوں کی مخالفت میں ایک اور گروپ کے درمیان جھڑپ شروع ہو گئی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز