بیت المقدس: صہیونی فوجیوں کے ساتھ جھڑپ میں تین فلسطینی جاں بحق، دسیوں زخمی

Jul 22, 2017 08:57 AM IST | Updated on: Jul 22, 2017 08:57 AM IST

مقبوضہ بیت المقدس۔ کل جمعہ کے روز فلسطین کے تمام شہروں بالخصوص مقبوضہ بیت المقدس میں بڑے پیمانے پر صہیونی ریاست کی قبلہ اول میں عبادت پر عاید کردہ پابندیوں کے خلاف زبردست مظاہرہ کیا گیا۔ قابض صہیونی فوج نے مسجد اقصیٰ کے باہر مقدس مقام کے دفاع کے لیے دھرنا دینے والے نہتے فلسطینیوں پر آنسوگیس کی شیلنگ، فائرنگ، دھاتی گولیوں کی بوچھاڑ اور صوتی بموں سے حملے کئے جس کے نیتجے میں تین فلسطینی شہید اور دسیوں زخمی ہوگئے ہیں۔ جمعہ کو فلسطینی شہریوں کی بھاری تعداد قبلہ اول کے باہر جمع تھی۔ مظاہرین نے مسجد کے باہر اسرائیل کے نصب کردہ ذلت کے دروازوں کو وہاں سے ہٹانے کا مطالبہ کیا تو اسرائیلی فوج نے ان پر گولیاں چلائیں اور آنسوگیس کی شیلنگ کی جس کے نتیجے میں دسیوں افراد دم گھٹنے سے زخمی ہو گئے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج اور پولیس نے نہتے مظاہرین پر وحشیانہ تشدد کی انتہا کردی، تین فلسطینی شہید ہوئے ہیں جب کہ دسیوں اسرائیلی فوج کی ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں لہو لہان ہو گئے ہیں۔ بیت المقدس میں راس العامود کے مقام پر قبلہ اول کے دفاع کے لیے نکالی گئی ریلی پر اسرائیلی فوج نے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں دسیوں فلسطینی زخمی ہوگئے۔

بیت المقدس: صہیونی فوجیوں کے ساتھ جھڑپ میں تین فلسطینی جاں بحق، دسیوں زخمی

فوٹو: مرکز اطلاعات فلسطین

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز