افغانستان میں تعینات فوجیوں کی سیکورٹی کے سلسلے میں ٹرمپ انتظامیہ نے بنائی نئی ​​حکمت عملی

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے افغانستان میں تعینات اپنے فوجیوں کی حفاظت کے سلسلے میں نئی ​​حکمت عملی بنائی ہے

Apr 28, 2017 12:11 PM IST | Updated on: Apr 28, 2017 12:11 PM IST

واشنگٹن : امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے افغانستان میں تعینات اپنے فوجیوں کی حفاظت کے سلسلے میں نئی ​​حکمت عملی بنائی ہے تاکہ وہاں طالبانی دہشت گردوں پر لگام لگائی جاسکےاور اب تک کی لڑائی میں ہوئے نقصان سے یہ دہشت گرد نکل نہ سکیں۔ گزشتہ ماہ افغانستان کی سرحد کے قریب دہشت گردی مہمات میں تین امریکی فوجی ہلاک ہو چکےہیں اور اس کے پیش نظر ٹرمپ انتظامیہ نے اپنے فوجیوں کی حفاظت کے لئے نئی پالیسی بنائی ہے۔ سرکاری طور پر امریکہ نے افغانستان میں سال 2014 کی طرف سے جنگی مہمات کو ختم کر دیا ہے۔ لیکن یہ بھی ایک بڑا مسئلہ ہے کہ اس وقت افغانستان کو امریکہ ان حالات میں اکیلا نہیں چھوڑ سکتا ہے کیونکہ طالبان تنظیم کو متفرق کرنے میں بین الاقوامی افواج نے جو محنت کی ہے اب اسلامک اسٹیٹ کی مدد سے طالبان اپنے پیروں پر دوبارہ کھڑا ہونے کی کوشش کر سکتا ہے۔ سینئر امریکی حکام نے نام خفیہ رکھنے کی شرط پر بتایا کہ ٹرمپ انتظامیہ مختلف ایجنسیوں سے بات چیت کرکے کیس کا جائزہ لےرہا ہے لیکن اس معاملے میں ابھی تک کوئی پختہ فیصلہ نہیں ہواہے اور اہم موضوع بحث یہ ہے کہ وہاں تعینات فوجیوں کی مدد کے لئے تقریباً پانچ ہزار امریکی فوجی اور بھیجے جائیں یا نہیں۔

اس وقت افغانستان میں نو ہزار امریکی فوجی تعینات ہیں جن میں سے سات ہزار فوجی افغانی فوجوں کو تربیت دے رہے ہیں اور 1500 فوجی انسداد دہشت گردی کی مہمات میں تعینات ہیں جو القاعدہ اور اسلامک اسٹیٹ کے خلاف مہمات میں لگے ہیں۔ فروری میں فوجی جنرل جان نكولسن نے کہا تھا کہ طالبان کی کمر توڑنے کے لئےانہیں مزید بین الاقوامی فوجیوں کی ضرورت ہے۔ اگرچہ کچھ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ وہاں اضافی فوجیوں کو بھیجنے کی کیا دلیل ہے اور وہاں کے حالات امید سے کہیں زیادہ بدتر ہو چکے ہیں۔

افغانستان میں تعینات فوجیوں کی سیکورٹی کے سلسلے میں ٹرمپ انتظامیہ نے بنائی نئی ​​حکمت عملی

اوباما انتظامیہ میں سابق وزیر دفاع رہ چکے کرسٹین وارمتھ کا کہنا ہے کہ اس سے پہلے آپ اس بات پر زور دیں کہ وہاں کتنے امریکی فوجیوں کو بھیجنا ہے اس بات کوبھی واضح طریقے سے سمجھ لینا چاہئےکہ آپ کا مقصد کیا ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز