تھریسا مئے مجھ پر نہیں، برطانیہ میں دہشت گردی پر توجہ دیں: ڈونلڈ ٹرمپ

واشنگٹن۔ برطانوی وزیراعظم ٹریسا مئے کی جانب سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹوئٹر پر چند ویڈیوز شیئر کرنے پر تنقید کے بعد امریکی صدر نے ان سے کہا ہے کہ وہ اپنی توجہ برطانیہ میں ’دہشت گردی‘ کی جانب مرکوز کریں۔

Nov 30, 2017 11:47 AM IST | Updated on: Nov 30, 2017 11:47 AM IST

واشنگٹن۔ برطانوی وزیراعظم تھریسا مئے کی جانب سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹوئٹر پر چند ویڈیوز شیئر کرنے پر تنقید کے بعد امریکی صدر نے ان سے کہا ہے کہ وہ اپنی توجہ برطانیہ میں ’دہشت گردی‘ کی جانب مرکوز کریں۔ ٹوئٹر میں ایک پیغام میں امریکی صدر کا کہنا تھا کہ ’آپ اپنی توجہ مجھ پر نہ رکھیں۔ آپ برطانیہ میں ہونے والی تباہ کن ریڈیکل اسلامی دہشت گردی پر توجہ دیں۔‘ اس سے پہلے انتہائی دائیں بازو کی ایک برطانوی تنظیم کی طرف سے مسلمانوں کے بارے میں جاری کردہ تین اشتعال انگیز ویڈیوز کو امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ری ٹویٹ کیا گیا تھا جس پر برطانوی وزیر اعظم کے دفتر 10- ڈاؤننگ اسٹریٹ نے کہا تھا امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے اشتعال انگیز ویڈیوز کو ری ٹوئٹ کرنا 'غلط' تھا۔ ان ویڈیوز میں مبینہ طور پر مسلمان افراد کو تشدد کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

پہلی ٹوئٹ 'بریٹن فرسٹ' یا برطانیہ پہلے نامی گروہ کے نائب رہنما جیڈا فرینسن کی طرف سے ٹوئٹ کیا گیا تھا۔ اس ویڈیو میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس میں ایک مسلمان تارک وطن کو بیساکھیوں کے سہارے چلنے والے ایک شخص پر حملہ کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔‘‘ اس کے بعد فرینسن نے مزید دو ویڈیوز جاری کئے جن میں دکھائے گئے افراد کے بارے میں بھی دعویٰ کیا گیا کہ وہ مسلمان ہیں۔ بریٹن فرسٹ کو انتہائی دائیں بازو کی جماعت برٹش نیشنل پارٹی کے ایک سابق رکن نے 2011 میں بنایا تھا۔ انھوں نے کہا کہ 'خدا کی ٹرمپ پر رحمت ہو اور امریکہ پر بھی‘۔ اصل میں یہ ویڈیوز ایک امریکی تجزیہ کار این کولٹر نے ٹوئٹر پر شیئر کی تھیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ انھیں ٹوئٹر پر فالو کرتے ہیں۔

تھریسا مئے مجھ پر نہیں، برطانیہ میں دہشت گردی پر توجہ دیں: ڈونلڈ ٹرمپ

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اور برطانوی وزیراعظم تھریسا مئے : فائل فوٹو، رائٹرز۔

اس گروپ نے مسلمانوں کے خلاف سوشل میڈیا پر پیغامات سے بہت جلد لوگوں کی توجہ اپنی طرف مبذول کرا لی۔ ان کے خیال میں برطانیہ کو 'اسلامی' بنایا جا رہا ہے۔ اس گروپ نے عام انتخابات میں امیگریشن اور اسقاط حمل کے خلاف پالیسی کی بنیاد پر اپنے امیدوار کھڑے کیے تھے لیکن اب تک اس کا ایک بھی امیدوار برطانوی دارالعوام کا رکن منتخب ہونے میں کامیاب نہیں ہو سکا۔ فرینسن کے ٹوئٹر پر باون ہزار سے زیادہ فالورز ہیں۔ انھوں نے صدر ٹرمپ کی طرف سے ان ویڈیو کو ری ٹوئٹ کیے جانے پر مسرت کا اظہار کیا۔ انھوں نے اپنے ایک اور پیغام میں لکھا کہ صدر ٹرمپ نے ان کی ویڈیوز کو شیئر کیا ہے جن کی ٹوئٹ کو چار کروڑ چالیس لاکھ افراد دیکھتے اور پڑھتے ہیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز