امریکہ نے شمالی کوریا کو دہشت گردی کا اسپانسر بتایا

Nov 21, 2017 12:49 PM IST | Updated on: Nov 21, 2017 12:49 PM IST

واشنگٹن۔  امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر شمالی کوریا کو دہشت گردی کا اسپانسر بتایا اور اس پر مزید پابندی لگانے کی بات کہی۔ مسٹر ٹرمپ نے کہا کہ محکمہ مالیات شمالی کوریا پر مزید پابندی کا اعلان کرے گا۔ صدر نے یہ فیصلہ پانچ ممالک کے 12 روزہ ایشیا دورے سے لوٹنے کے بعد لیا ہے۔ مسٹر ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں صحافیوں کو بتایا، "دنیا کو جوہری تباہی کی دھمکی دینے کے علاوہ شمالی کوریا نے بار بار بین الاقوامی دہشت گردی کی حمایت کی ہے جس میں غیر ملکی زمین پر قتل بھی شامل ہے۔ لفظ ’اسپانسر‘ اس پر مزید پابندی لگائے گا اور اسے الگ تھلگ کرنے میں ہماری مہم کی حمایت کریں گے‘‘۔

انہوں نے مزید کہا، "یہ کافی وقت پہلے کر دیا جانا چاہیے تھا۔" شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی جانب سے عائد پابندیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے جوہری اور میزائل پروگرام جاری رکھا ہوا ہے۔ ٹرمپ کے اس اعلان کے بعد اب شمالی کوریا ان ممالک کی فہرست میں شامل ہو گیا ہے جنہیں مسلسل بین الاقوامی سطح پر دہشت گردی کو حمایت دینے والا ملک سمجھا جاتا ہے۔ امریکہ نے اس سے پہلے ایران، سوڈان اور شام کو بھی اس فہرست میں شامل کر رکھا تھا۔

امریکہ نے شمالی کوریا کو دہشت گردی کا اسپانسر بتایا

امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ: فائل فوٹو۔

اسی سال ستمبر میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے شمالی کوریا پر نئی پابندیاں لگائی تھی۔ پابندی کا مسودہ امریکہ نے تیار کیا تھا جسے چین اور روس سمیت تمام 15 ارکان نے منظوری دی تھی۔ امریکی صدر نے کہا کہ شمالی کوریا کی حکومت کو قانونی طریقے سے کام کرنا چاہئے اور اپنے جوہری پروگرام پر روک لگانی چاہئے۔ اس سے پہلے جنوبی کوریا نے کل کہا تھا کہ اس سال کے آخر تک شمالی کوریا امریکہ تک مار کرنے والے بین البر اعظمی بیلسٹک میزائل تیار کر سکتا ہے۔ جنوبی کوریا نے کہا کہ وہ اس معاملے میں جاری تمام سرگرمیوں پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز