ٹرمپ نے ہندستانی انجینئر کے قتل کی مذمت کی، امیگریشن پالیسیوں کا دفاع کیا

واشنگٹن۔ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کنساس میں ہندستانی انجینئر سرانیواس كُچیبھوتلے کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پورا امریکہ اس طرح کے واقعہ کی مخالفت کرنے کے لئے ایک ساتھ کھڑا ہے۔

Mar 01, 2017 07:09 PM IST | Updated on: Mar 01, 2017 07:09 PM IST

واشنگٹن۔ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کنساس میں ہندستانی انجینئر سرانیواس كُچیبھوتلے کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پورا امریکہ اس طرح کے واقعہ کی مخالفت کرنے کے لئے ایک ساتھ کھڑا ہے۔ مسٹر ٹرمپ نے کل امریکی کانگریس کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر كُچیبھوتلے کے قتل پر تعزیت کا اظہار کیا اور کہا، ’ہم نے ایک ملک کے طور پر اس طرح کی نفرت کے واقعہ کی مذمت کرنے کے لئے ایک ساتھ کھڑے ہیں۔‘ واضح رہے کہ امریکہ کے کنساس میں گزشتہ بدھ کو ایک ہندستانی انجینئر اور اس کے اتحادی آلوک مداساني پر فائرنگ کی گئی تھی جس میں شری نواس کی موت ہو گئی اور اور آلوک زخمی ہو گیا تھا۔ یہ دونوں ایک امریکی کمپنی گارمن میں کام کرتے تھے۔ اس فائرنگ میں ایک دوسرے شخص ايان گرلو بھی زخمی ہو گیا تھا۔ واشنگٹن میں ہندستانی سفارت خانے نے اس واقعہ کے سلسلے میں امریکی حکومت کے سامنے تشویش ظاہر کی ہے اور اس معاملے کی تفصیلی تحقیقات کرانے کی اپیل کی ہے۔ شری نواس كچيبھوتلے اور ان کے معاون آلوک مداساني پر گولی چلانے والے شخص نے چلا کر کہا تھا، ’میرے ملک سے نکل جاؤ۔‘ واقعہ کے پانچ گھنٹوں کے بعد فائرنگ کرنے والے ملزم ایڈم پرنٹن کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

امیگریشن پالیسیوں کا دفاع کیا

ٹرمپ نے ہندستانی انجینئر کے قتل کی مذمت کی، امیگریشن پالیسیوں کا دفاع کیا

وہیں، امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنی متنازعہ امیگریشن پالیسیوں کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کو دہشت گردی کے خطرے سے محفوظ بنانے کے لئے سخت امیگریشن قانون بنائے گئے ہیں۔ مسٹر ٹرمپ نے کل امریکی کانگریس کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سخت امیگریشن قانون بنانے اور سرحدوں کو محفوظ بنانے کا اثر امریکی لوگوں پر پڑے گا اور ان کی پوزیشن اور بہتر ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ان پالیسیوں میں تبدیلی کرنے سے امریکہ میں روزگار کے مواقع بڑھیں گے اور لوگوں کو بہتر تنخواہ ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ کئی ممالک میں قابلیت کی بنیاد پر امیگریشن کو منظوری دینے کا بندوبست ہے۔ ایسا ہونا بھی چاہئے۔ کوئی بھی ایسا شخص جو کسی اور ملک میں داخل ہونے جا رہا ہے اور وہاں کام کر کے اپنی روزی روٹی کمانے والا ہے، اس کی قابلیت کی جانچ کے بعد اسے داخل ہونے کی اجازت دینا غلط نہیں ہے۔ مسٹر ٹرمپ نے کہا، ’ہم سسٹم پر مبنی امیگریشن نظام تیار کریں گے۔ امیگریشن قانون کو لاگو کرنے پر امریکی عوام کی تنخواہ بڑھے گی، بے روزگاروں کو مدد ملے گی، اربوں ڈالر کی بچت ہوگی اور ہمارا ملک زیادہ محفوظ بن سکے گا۔‘

Loading...

 ڈونلڈ ٹرمپ نے کانگریس کے مشترکہ اجلاس سے اپنے پہلے خطاب میں کہا کہ ملک میں یہودی برادری کے مراکز پر حملوں کی دھمکیوں اور یہودی قبرستان میں توڑ پھوڑ کے بعد سامنے آنے والے ردعمل سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ امریکہ بطور ملک منافرت پر مبنی ہر طرح کے اقدامات کی مذمت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایک نئے امریکی عزم کو دیکھ رہے ہیں ’’ہمارے اتحادی دیکھیں گے کہ امریکہ ایک مرتبہ پھر قیادت پر آمادہ ہے۔‘‘صدر ٹرمپ نے کہا کہ اُنھوں نے امریکیوں کی بات سنی اور امیگریشن قوانین کا نفاذ شروع کیا۔ انہوں نے اپنے اس خطاب میں ایک مرتبہ پھر میکسیکو سے اپنی سرحد پر دیوار بنانے کے عزم کو دہرایا اور کہا کہ یہ جرائم اور منشیات کے خلاف موثر اقدام ہو گا۔ اُنھوں نے کہا کہ امریکہ کو دہشت گردی سے محفوظ رکھنے کے لیے اُن کی انتظامیہ سخت انتظامات کر رہی ہے، جن میں ملک میں داخل ہونے والے تارکین وطن کی موثر جانچ بھی شامل ہے۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ امریکہ انتہا پسندی کی پناہ گاہ نہیں بنا سکتا۔

اپنے خطاب میں صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اُنھوں نے پینٹاگان کو ہدایت کی ہے کہ وہ ’داعش‘ کو شکست دینے کے لیے حکمت عملی مرتب کرے۔ اُنھوں نے کہا کہ اس دہشت گرد تنظیم نے مسلمانوں اور مسیحی مردوں، خواتین اور بچوں کو قتل کیا۔ صدر کا کہنا تھا کہ ایسے میں جب امریکہ نے اربوں ڈالر بیرون ملک خرچ کیے، ملک میں بنیادی ڈھانچہ بری طرح متاثر اور بدحالی کا شکار ہوا۔ اُن کا کہنا تھا کہ امریکہ اُسی صورت دوبارہ عظیم ملک بن سکتا ہے جب ہم اپنے شہریوں کے مفادات کو سب سے مقدم رکھیں۔

داعش کے خاتمہ کا عہد کیا

دوسری طرف، ٹرمپ  نے جنگجو تنظیم داعش (آئی ایس) کو مٹانے کا عزم کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ امریکہ کو دہشت گردوں کی پناہ گاہ نہیں بننے دیں گے۔ مسٹر ٹرمپ نے کل امریکی کانگریس کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ داعش کو ختم کرکے ہی دم لیں گے انہوں کہا کہ اس کا م کے لئے امریکہ کو اپنے مسلم معاون ملکوں کا بھی تعاون چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی سے اپنے ملک کی حفاظت کے لئے سخت قدم اٹھائے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا ’’داعش مسلمانوں عیسائیوں اور ہر مذہب کے لوگوں کو قتل کرتا ہے ۔ ہم اپنے معاون مسلم ممالک کی مدد سے داعش کی بربادی اور اس کے خاتمہ کا عہد کرتے ہیں ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز