ٹرمپ جوڑے نے وزیر اعظم مودی کا گرمجوشی سے استقبال کیا

Jun 27, 2017 03:22 PM IST | Updated on: Jun 27, 2017 03:22 PM IST

واشنگٹن۔  امریکہ میں اقتدار کی تبدیلی کے بعد مختلف مسائل پر جاری تعطل کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی اور امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے درمیان وہائٹ ​​ہاؤس میں ملاقات ہوئی۔ اپنے دو روزہ دورے پر امریکہ پہنچے مسٹر مودی نے وہائٹ ​​ہاؤس کے اوول ہال میں مسٹر ٹرمپ سے تقریباً 20 منٹ تک ملاقات کی۔ اس موقع پر مسٹر ٹرمپ کی اہلیہ میلانيا ٹرمپ بھی موجود تھیں۔ بعد میں وفد سطح کی بات چیت شروع ہوئی۔ وہائٹ ​​ہاؤس پہنچنے پر خود مسٹر ٹرمپ اور ان کی اہلیہ نے مسٹر مودی کا گرم جوشی سے استقبال کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ امریکی صدر نے ان کا جس طرح خیر مقدم کیا، وہ سوا سو کروڑ ہندوستانیوں کا احترام ہے۔  دنیا کے سب سے زیادہ طاقتور صدر (مسٹر ٹرمپ) اور دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کے وزیر اعظم (مسٹر مودی) کے درمیان یہ پہلی ملاقات تھی۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات کا یہ سلسلہ تقریباً 20 منٹ تک چلا۔

امریکی صدر نے کہا کہ مسٹر مودی عظیم وزیر اعظم ہیں۔ وہ ہندوستان کے لئے اچھا کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے مودی حکومت کی ترقی کے سفر کی تعریف کرتے ہوئے انہیں مبارکباد بھی دی۔ مسٹر ٹرمپ نے کہا کہ مسٹر مودی کی قیادت میں ہندوستان اقتصادی مورچے پر اچھا کام کر رہا ہے اور ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔ مسٹر مودی نے وہائٹ ​​ہاؤس میں استقبال کے لئے ٹرمپ جوڑے کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹرمپ جوڑےکی طرف سے انہیں دیا گیا احترام ان کا نہیں، بلکہ سوا سو کروڑ ہندوستانیوں کا احترام ہے۔ وزیر اعظم نے کہا، ’’2014 میں جب مسٹر ٹرمپ صدر نہیں تھے تب وہ ہندوستان گئے تھے۔ اس وقت بھی انہوں نے میرے بارے میں کچھ اچھی باتیں کہی تھیں، جو آج بھی میرے ذہن میں ہیں، اس کے لئے بھی مسٹر ٹرمپ کو شکریہ ۔‘‘ مسٹر مودی ہندوستانی وقت کے مطابق کل دیر رات قریب ایک بج کر 10 منٹ پر وائٹ ​​ہاؤس پہنچے، جہاں ہندوستانی وزیر اعظم کو خصوصی اعزاز دیتے ہوئے ٹرمپ جوڑا ان کا استقبال کرنے کےلئے خود وہائٹ ​​ہاؤس کے باہر پہنچا۔ مذاکرات کے لئے وائٹ ​​ہاؤس کے اندر جانے سے پہلے ٹرمپ جوڑے نے بے حد گرم جوشی سےمسٹر مودی کا استقبال کیا۔ کئی بار مسٹر ٹرمپ اور مسٹر مودی کھل کر ہنستے نظر آئے۔

ٹرمپ جوڑے نے وزیر اعظم مودی کا گرمجوشی سے استقبال کیا

ملاقات کے بعد وائٹ ​​ہاؤس کے کابینہ کے کمرے میں دونوں ممالک کے درمیان وفد سطح کی بات چیت ہوئی۔ مذاکرات کے آغاز میں مسٹر ٹرمپ نے امریکہ سے ہتھیار خریدنے کے لئے ہندوستان کا اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ جیسے فوجی ہتھیار کوئی نہیں بنا سکتا۔

ہندوستانی وزیر اعظم اور امریکی صدر نے ایک مشترکہ بیان بھی جاری کیا۔ مسٹر ٹرمپ نے مسٹر مودی کے اعزاز میں ضیافت کا بھی انعقاد کیا۔ امریکی صدر نے اب تک 45 سے زائد عالمی رہنماؤں سے ملاقات کی ہے، لیکن مسٹر مودی ایسے پہلے غیر ملکی رہنما ہیں، جن کے اعزاز میں وائٹ ​​ہاؤس میں مسٹر ٹرمپ نے ضیافت کا اہتمام کیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز