روہنگیا بحران سے متعلق رپورٹنگ کرنے والے نیوز ایجنسی رائٹر کے دو صحافیوں کو میانمار نے کیا گرفتار

Dec 13, 2017 09:51 PM IST | Updated on: Dec 13, 2017 09:51 PM IST

رنگون: میانمار کے رنگون شہر میں امریکی سفارتخانہ نے آج یہاں گرفتار شدہ نیوز ایجنسی رائٹر کے رپورٹروں وا لونے اور كياو سوئے او کی تفصیلی معلومات دینے اور فوری طور پر صحافیوں سے ملنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ میانمار پولس نے کل خبر رساں ایجنسی رائٹر کے دو صحافیوں وا لونے اور كياو سوئے او کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

رنگون میں امریکی سفارتخانہ نے اپنی ویب سائٹ پر آج جاری بیان میں کہا کہ وہ کل رات رنگون میں پولیس افسران کی دعوت پر ان سے ملنے گئے، ہم دونوں صحافیوں کی خلاف اصول گرفتاری پر فکر مند ہیں ۔ جمہوریت کی کامیابی کے لئے صحافیوں کو ان کے کام میں مکمل آزادی دی جانی چاہئے۔ ہم حکومت سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ ان گرفتاریوں کی تفصیلی معلومات دے اور فوری طور پر صحافیوں سے ملنے کی اجازت دے ۔ وا لونے جون 2016 سے رائٹر کے ساتھ وابستہ تھے۔ انہوں نے رائٹر کے لئے کئی طرح کی خبریں کیں۔ ان میں راخین صوبے میں روہنگیا بحران پر کی گئی خبریں بھی شامل ہيں۔ وہیں كياو سوئے اسی سال ستمبر سے رائٹر سے وابستہ ہوئے تھے۔

روہنگیا بحران سے متعلق رپورٹنگ کرنے والے نیوز ایجنسی رائٹر کے دو صحافیوں کو میانمار نے کیا گرفتار

علامتی تصویر

دریں اثناء، میانمار کے سرکاری ترجمان جیو هتل نے کہاکہ یہ بات صحیح ہے کہ ان کو گرفتار کیا گیا ہے۔ نہ صرف رپورٹروں کو بلکہ معاملے سے شامل پولیس اہلکاروں کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔ ہم ان رپورٹروں اور پولیس اہلکاروں کے خلاف کارروائی کریں گے ۔ تاہم، انہوں نے اس بات کی معلومات نہیں دیں کہ رپورٹروں کو کس وجہ سے گرفتار کیا گیا ہے، ان کے خلاف کیا کارروائی کی جائے گی اور وہ کس معاملے کی بات کر رہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز