چین میں پکھار طوفان کی دستک، اسکولوں کو عارضی طور پر بند کرنے کا فیصلہ

Aug 28, 2017 01:10 PM IST | Updated on: Aug 28, 2017 01:10 PM IST

بیجنگ۔ چین میں آئے 14 ویں پکھار طوفان سے گوانگ ڈونگ صوبہ کے تیئشان شہر میں مٹی کے تودے گرنے کا واقعہ پیش آیا اور فی سیکنڈ 33 میٹر تک تیز آندھی چلی۔ خبر رساں ایجنسی ژنہوا نے محکمہ موسمیات کے حوالے سے بتایا کہ شہر میں آج بارش ہونے اور تیز ہوائیں چلنے کا اندازہ ہے۔ مقامی کمپنیوں، سرکاری ایجنسیوں، اسکولوں اور عوامی مقامات کو عارضی طور پر بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ کچھ دن پہلے ہاتو طوفان نے کافی تباہی مچائی تھی اور کچھ لوگوں کی موت ہوگئی تھی۔ این ایم سی نے بتایا کہ پکھار شمال مغرب کی جانب بڑھے گا اور شام کو گوانگسی جھوانگ علاقے میں داخل ہوگا۔ صوبہ کے ان شہروں میں جہاں گزشتہ ہفتہ ہاتو طوفان آیا تھا، میں آج ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ چین کے جنوبی علاقے میں آنے والے طاقتور طوفان ’ہاتو‘ سے کئی علاقے زیرِ آب ہوگئے تھے جب کہ اب تک 16 افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہوچکی ہے۔

حکام کے مطابق طوفان ’ہاتو‘ نصف صدی کے عرصے کے دوران جنوبی چین کو نشانہ بنانے والا سب سے سے طاقت ور طوفان تھاجس سے چین کا معروف سیاحتی علاقہ مکاؤ سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔ ہانگ کانگ کے مغرب میں واقع مکاؤ اپنے جوئے خانوں کی وجہ سے مشہور ہے اور 400 سال تک پرتگال کی کالونی رہا ہے۔ 30مربع کلومیٹر پر مشتمل یہ علاقہ 1999ء میں چین کے زیرِ انتظام آیا تھا۔ حکام کے مطابق تین جانب سے کھلے سمندر میں گھرا مکاؤ طوفان سے شدید متاثر ہوا ہے جہاں سمندر کی بلند لہروں اور طوفانی بارش سے بیشتر علاقے زیرِ آب آگئے تھے۔

چین میں پکھار طوفان کی دستک، اسکولوں کو عارضی طور پر بند کرنے کا فیصلہ

این ایم سی نے بتایا کہ پکھار شمال مغرب کی جانب بڑھے گا اور شام کو گوانگسی جھوانگ علاقے میں داخل ہوگا۔

شہر میں بارش سے ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد آٹھ ہوگئی ہے اور حکام کو خدشہ ہے کہ نشیبی علاقوں سے پانی اترنے کے بعد مزید لاشیں برآمد ہوسکتی ہیں۔ علاقے میں سیلابی ریلوں اور طوفانی جھکڑوں کے باعث درخت، دروازے اور کھڑکیاں اکھڑنے اور ٹریفک کے حادثات میں ڈیڑھ سو سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔ علاقائی حکومت کا کہنا ہے کہ طوفانی جھکڑوں سے علاقے کی کئی بلند عمارتیں بری طرح متاثر ہوئی ہیں اور طوفان کے ایک روز بعد بھی شہر کے بیشتر علاقوں میں پانی اور بجلی کی فراہمی بحال نہیں ہوسکی ہے۔ طوفان سے سب سے زیادہ متاثر شہر کا تاریخی وسطی علاقہ ہوا ہے جو مکمل طور پر پانی میں ڈوبا ہوا ہے۔

چین کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق طوفان اور شدید بارشوں سے مکاؤ سے متصل صوبے گوانگ ڈونگ میں بھی آٹھ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ طوفان ’ہاتو‘ نے چین کے اس ساحلی علاقے کو بدھ کو 160 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے نشانہ بنایا تھا۔ طوفان کے باعث لگ بھگ 27 ہزار افراد کو ہنگامی پناہ گاہوں میں منتقل کرنا پڑا تھا جب کہ شدید بارش اور تیز ہواؤں سے گوانگ ڈونگ میں کھڑی فصلیں تباہ ہوگئی ہیں۔علاقے میں ٹرین سروس اور سیکڑوں پروازیں بھی منسوخ کردی گئیں۔ طوفان کے باعث ہانگ کانگ میں بھی بعض علاقوں کے زیرِ آب آنے اور لوگوں کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز