اقوام متحدہ نے افغانستان میں اسکولوں اور شہری علاقوں میں حملے کی مذمت کی

اقوام متحدہ نے افغانستان میں کل اسکولوں اور شہری علاقوں کو نشانہ بنا کر کیے گئے طالبان جنگجوؤں کے حملے کی سخت مذمت کی ہے۔ ان حملوں میں اسکول کے بچوں کو بھی نشانہ بنایا گیا تھا۔

Sep 12, 2018 11:25 PM IST | Updated on: Sep 12, 2018 11:25 PM IST

اقوام متحدہ نے افغانستان میں کل اسکولوں اور شہری علاقوں کو نشانہ بنا کر کیے گئے طالبان جنگجوؤں کے حملے کی سخت مذمت کی ہے۔ ان حملوں میں اسکول کے بچوں کو بھی نشانہ بنایا گیا تھا۔ ننگرهار صوبے کے دارالحکومت جلال آباد میں منگل کے روز 15 منٹ کے وقفے پر تین اسکولوں کو نشانہ بنایا گیا اور ان میں ایک اسکولی طالب علم کی موت ہو گئی اور متعدد دیگر زخمی ہو گئے۔ ایک اور اسکول کے باہر لگائے گئے دھماکہ خیز مواد کو سلامتی دستہ نے ناکارہ کر دیا۔ اس علاقے میں گزشتہ روز کئی بم حملوں میں کم از کم 21 افراد ہلاک اور 60 سے زائد زخمی ہائے گئے ہیں۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گتیرش نے ان حملوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عالمی ادارہ افغان حکومت اور وہاں کے لوگوں کے ساتھ ہے كيونكہ وہ بھی امن کے حق میں ہے۔

اقوام متحدہ نے افغانستان میں اسکولوں اور شہری علاقوں میں حملے کی مذمت کی

اقوام متحدہ

افغانستان میں اقوام متحدہ کے امدادی مشن ( یو این اے ایم اے) کے خصوصی نمائندے تادامیچي ياماموتو نے ان حملوں پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان حملوں میں ہلاک لوگوں کے اہل خانہ کے ساتھ ہم یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں۔

انہوں نے ان حملوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ "اسکولوں اور شہری علاقوں میں بم دھماکہ کے واقعات دہشت گردی کے انتہائی گھناؤنے اور بھیانک حرکتیں ہیں جن میں اسکول کے بچوں کو بھی نہیں بخشا گیا ہے۔ یہ بین الاقوامی انسانی قوانین کے خلاف ہیں"۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز