طلاق ثلاثہ بل : اپوزیشن کے اعتراضات کا رکھاگیاہے خیال ۔ دیکھیں ویڈیو– News18 Urdu

طلاق ثلاثہ بل : اپوزیشن کے اعتراضات کا رکھاگیاہے خیال ۔ دیکھیں ویڈیو

یہ پہلے کا بل نہیں ہے بلکہ اس میں کچھ ترمیمات کئے گئے ہیں اوراپوزیشن کے اعتراضات کا بھی خیال رکھا گیا ہے: مختارعباس نقوی

Jun 14, 2019 01:06 PM IST | Updated on: Jun 14, 2019 01:06 PM IST

مرکزی حکومت 17ویں لوک سبھا کے پہلے اجلاس میں ہی طلاق ثلاثہ بل کو پارلیمنٹ میں پیش کرنے کی تیاری کررہی ہے۔ حکومت نے اس بل میں کئی ترمیمات بھی کی ہے۔ مرکزی وزیر اقلیتی امور مختارعباس نقوی کے مطابق طلاق ثلاثہ بل سماجی برائی کو ختم کرنے کیلئے لایا جارہا ہے۔ مختار عباس نقوی نے یہ بھی واضح کیا کہ یہ پہلے کا بل نہیں ہے بلکہ اس میں کچھ ترمیمات کئے گئے ہیں اور اپوزیشن کے اعتراضات کا بھی خیال رکھا گیا ہے۔ نیوز18 اردو سے بات کرتے ہوئے وزیراقلیتی امور نے یہ بھی واضح کیا کہ پانچ کروڑ اقلیتی طلبا کو دی جانے والی اسکالرشپ میں نصف حصہ طالبات کیلئے مختص رہے گا۔

واضح رہے کہ بدھ کو وزیر اعظم مودی کی صدارت میں مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں طلاق ثلاثہ بل کو پھر ایک بارپارلیمنٹ میں پیش کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے۔ خیال رہے کہ 16 ویں لوک سبھا تحلیل ہونے کے ساتھ ہی یہ بل غیر موثر ہوگیا تھا ۔ کیونکہ یہ پارلیمنٹ کے ذریعہ پاس نہیں ہوسکا تھا ۔ بل راجیہ سبھا میں زیرالتوا تھا ۔ مرکزی وزیر پرکاش جاوڑیکر نے بتایا کہ بل پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا اور اپوزیشن پارٹیوں نے اس پر جواعتراضات کئے تھے ، ان پر بھی نوٹس لیا جائے گا ۔ یہ بل 17 جون سے شروع ہورہے 17 ویں لوک سبھا کے پہلے سیشن میں پیش کیا جاسکتاہے۔

Loading...

ماضی میں مودی حکومت نے تین طلاق کا استعمال کرنے والو ں کوتین سال کی سزاء کا حقدار بنانے کے لئے تین آرڈیننس لاچکی ہے۔ سال2018کے پہلے مانسون سیشن کے بعد پہلا آرڈیننس پیش کیاگیاتھا۔جبکہ دوسراآرڈیننس اسی سال سرمائی سیشن کے بعد جاری کیاگیا۔ اسی طرح تیسرے آرڈیننس پچھلی کابینہ کے آخری اجلاس کے دوران 19فبروری میں جاری کیاگیاتھا۔

Loading...