سال 2017-18 میں ہندوستان میں بڑھ سکتی ہے بے روزگاری : رپورٹ

Jan 13, 2017 05:05 PM IST | Updated on: Jan 13, 2017 05:05 PM IST

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ لیبر تنظیم کی رپورٹ کے مطابق سال 2017 اور 2018 کے درمیان ہندوستان میں بے روزگاری میں اضافہ ہو سکتا ہے اور روزگار کے نئے مواقع میں رکاوٹ آسکتی ہے۔ اقوام متحدہ بین الاقوامی لیبر تنظیم (آئی ایل او) نے '2017 میں عالمی روزگار اور سماجی نقطہ نظر پر جمعرات کو اپنی رپورٹ جاری کی۔

رپورٹ میں روزگار کی ضروریات کی وجہ سے اقتصادی ترقی پچھڑتی ہوئی نظر آرہی ہے اور اس میں پورے 2017 کے دوران بے روزگاری بڑھنے اور سماجی عدم مساوات مزید بگڑنے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔سال 2017 اور سال 2018 میں ہندوستان میں روزگار کے مواقع پیدا ہونے کا امکان نہیں ہے کیونکہ اس دوران آہستہ آہستہ بے روزگاری بڑھے گی اور فی صد کے تناظر میں اس میں گراوٹ دکھائی دے گی۔

سال 2017-18 میں ہندوستان میں بڑھ سکتی ہے بے روزگاری : رپورٹ

رپورٹ کے مطابق امکان ہے کہ گزشتہ سال کے 1.77 کروڑ بے روزگاروں کے موازنہ میں 2017 میں ہندوستان میں بے روزگاروں کی تعداد 1.78 کروڑ اور اس کے اگلے سال 1.8 کروڑ ہو سکتی ہے۔ فیصد کے تناظر میں 2017-18 میں بے روزگاری کی شرح 3.4 فیصد بنی رہے گی۔رپورٹ میں یہ بھی تسلیم کیا گیا کہ 2016 میں ہندوستان کی 7.6 فیصد شرح نمو نے گزشتہ سال جنوبی ایشیا کے لئے 6.8 فیصد کی شرح نمو حاصل کرنے میں مدد کی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز