روہنگیا مسلم خواتین اور لڑکیوں کی عصمت دری کیلئے میانمار فوج قصوروار ، اقوام متحدہ کا تشویش کا اظہار

Sep 28, 2017 03:47 PM IST | Updated on: Sep 28, 2017 03:47 PM IST

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ نے میانمار سے بھاگ کر بنگلہ دیش پہنچے روہنگیا پناہ گزینوں کے ساتھ میانمار فوج کی جانب سے مبینہ طور پر عصمت دری کی خبروں پر حیرانی کا اظہار کیا ہے۔ مہاجرین کیلئے اقوام متحدہ کی بین الاقوامی تنظیم کے ڈائریکٹر جنرل ولیم لیسی سوینگ نے دعوی کیا کہ روہنگیا پناہ گزینوں کی خواتین اور لڑکیوں کے ساتھ مبینہ طور پر عصمت دری کیلئے میانمار کی فوج قصوروار ہے۔ حالانکہ میانمار حکومت نے سوینگ کے دعوؤں کو خارج کردیا ہے لیکن ساتھ ہی اس کی بین الاقوامی جانچ کرانے سے بھی منع کردیا ہے۔

تنظیم نے ایک بیان میں کہا کہ 25 اگست کے بعد سے اب تک چار لاکھ 80 ہزار روہنگیا پناہ گزین بنگلہ دیش کے کاکس بازار پہنچ چکےہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ آئی او ایم کے ڈاکٹروں نے ایسے درجنوں خواتین کا علاج کیا ہے جو اگست میں عصمت دری کا شکار ہوئی ہیں۔ لیکن یہ حقیقی تعداد کا ایک چھوٹا سا حصہ ہے۔

روہنگیا مسلم خواتین اور لڑکیوں کی عصمت دری کیلئے میانمار فوج قصوروار ، اقوام متحدہ کا تشویش کا اظہار

روہنگیا مہاجرین، فائل فوٹو : رائٹر

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز