ٹرمپ کیلئے منعقدہ دعائیہ تقریب میں وقت کے تقاضے سے ہم آہنگ قرآنی آیات کی تلاوت

Jan 23, 2017 03:14 PM IST | Updated on: Jan 23, 2017 03:14 PM IST

واشنگٹن : نئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے عہد کے آغاز کے موقع پر منعقدہ دعائیہ تقریب میں امریکی امام محمد ماجد نے حسب روایت اذان دینے کے بجائے ارباب اقتدار کے سامنےدو قرآنی سورتیں پڑھیں ۔ سورہ فاتحہ سمیت سورہ روم اور سورہ الحجرات کی جو آیات تلاوت کی گئیں بظاہر ان کا رخ امریکی انتخابات کے دوران اور بعد میں چیزیں مسلمانوں کے بارے میں کہی جانے والی بہت سی باتوں اور مسلمانوں کی وفاداری کے بارے میں اٹھائے جانے والے سوالات کی طرف تھا۔

تلاوت کردہ قر ٓانی آیات کا پیغام یہ تھا ’’ ہمیں متحد ہونا چاہئے اور تنوع کا احترام کرنا چاہئے کیونکہ خدا نے ہمیں اسی لئے بنایا ہے‘‘۔ دونوں آیات[سورۃ الحجرات کی آیت نمبر 13 اور سورۃ الروم کی آیت نمبر 22 ] کا انگریزی میں ترجمہ بھی پڑھ کر سنایا گیا۔آیات حسب ذیل ہیں:

ٹرمپ کیلئے منعقدہ دعائیہ تقریب میں وقت کے تقاضے سے ہم آہنگ قرآنی آیات کی تلاوت

يَآ اَيُّـهَا النَّاسُ اِنَّا خَلَقْنَاكُمْ مِّنْ ذَكَرٍ وَّاُنْثٰى وَجَعَلْنَاكُمْ شُعُوْبًا وَّقَبَآئِلَ لِتَعَارَفُوْا ۚ اِنَّ اَكْـرَمَكُمْ عِنْدَ اللّـٰهِ اَتْقَاكُمْ ۚ اِنَّ اللّـٰهَ عَلِيْـمٌ خَبِيْـرٌ (الحجرات:13)

وَمِنْ آيَاتِهِ خَلْقُ السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ وَاخْتِلَافُ أَلْسِنَتِكُمْ وَأَلْوَانِكُمْ إِنَّ فِي ذَلِكَ لَآيَاتٍ لِّلْعَالِمِينَ(الروم: 22)

امریکہ کے 45 ویں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے لیے بین المذاہب دعائیہ تقریب کیپٹل ہل میں منعقد کی گئی تھی جس میں مختلف مذاہب سے تعلق رکھنے والے مذہبی رہنماؤں نے شرکت کی۔

امریکی صدر اور خاتون اول کی آمد کے بعد تقریب میں پہلے تو تمام افراد نے مل کر اجتماعی دعا کی بعدازاں مختلف مذاہب بشمول یہودیت، عیسائیت،اسلام، ہندو ازم ، سکھ ازم، پارسی اور دیگر عقائد کے مذہبی رہنماؤں نے اپنے اپنے عقیدے کے مطابق نئے امریکی صدر کو اپنی دعاؤں سے نوازا۔ تقریب میں پیانو پر میوزیشن نے کئی دھنیں پیش کیں، آرکسٹرا سمیت کئی نغمے بھی پیش کئے گئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز