امریکی سپریم کورٹ نے ٹرمپ کی عائد کردہ سفری پابندیوں کو جزوی طور پر بحال کیا

Jun 27, 2017 04:34 PM IST | Updated on: Jun 27, 2017 04:34 PM IST

واشنگٹن۔  امریکہ کے سپریم کورٹ نے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی متنازعہ سفری پابندیوں کو جزوی طور پر بحال کر دیا ہےجس کے تحت بنیادی طور پر چھ مسلم ممالک کو نشانہ بنایا گیا تھا۔ سپریم کورٹ اس معاملے کی مکمل سماعت اس موسم خزاں میں کرے گا۔ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے عدالت عظمی کے اس فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے اسے قومی سلامتی کے لئے ایک جیت بتایا ہے۔ عدالت کے ججوں نے کہا کہ سفری پابندی جس پر نچلی عدالت نے روک لگا دی تھی اسے ہدف بنائے گئے ملکوں کے ان مسافروں پر نافذ کیا جا سکتا ہے جن کے پاس امریکہ میں کسی شخص یا اکائی کے ساتھ کوئی مستند تعلق نہیں ہے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ پابندی فی الحال ایسے لوگوں کے خلاف نافذ نہیں کی جا سکتی جن کے امریکہ کے ساتھ ذاتی تعلقات ہیں۔ قابل ذکر ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے اس سفری پابندی کا اعلان مارچ کے مہینہ میں کیا گیا تھا۔ اس کے تحت ایران، لیبیا، صومالیہ، سوڈان، شام اور یمن سے آنے والے مسافروں کے لوگوں پر 90 دن کے لئے پابندی لگائی گئی تھی۔

امریکی سپریم کورٹ نے ٹرمپ کی عائد کردہ سفری پابندیوں کو جزوی طور پر بحال کیا

رائٹرز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز