ہندوستان کے 'بھگوڑے' وجے مالیا لندن میں گرفتار، کچھ ہی دیر میں ملی ضمانت

Apr 18, 2017 04:02 PM IST | Updated on: Apr 19, 2017 04:30 PM IST

نئی دہلی۔  اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) سمیت کئی بینکوں کے کروڑوں روپے کا قرض ادا نہ کرنے کے ملزم شراب کے تاجر وجے مالیا کو اسکاٹ لینڈ یارڈ پولیس نے آج لندن میں گرفتار کر لیا۔ اگرچہ بعد میں اسے ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔ مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کے ذرائع نے یہاں بتایا کہ مالیا کو ہندستان کی جانب سے حوالگی کی درخواست کی بنیاد پر گرفتار کیا گیا ہے اور جلد ہی وہاں سی بی آئی کی ایک ٹیم بھیجی جائے گی۔ لندن سے موصولہ اطلاعات کے مطابق، مالیا کو ویسٹ منسٹر کی مجسٹریٹ عدالت کے سامنے پیش کیا گیا، جہاں اس کی ضمانت منظور کر لی گئی۔ مالیا پر ایس بی آئی سمیت مختلف بینکوں کا 9000 کروڑ روپے کا قرض ادا نہ کرنے کا الزام ہے۔ مالیا گزشتہ برس برطانیہ چلا گیا تھا، اس کے بعد سے اسے ہندوستان لانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔

اس دوران حکومت نے دعوی کیا کہ کنگ فشر کے مالک مالیا کی لندن میں ہوئی گرفتاری برطانوی حکومت سے اس کی درخواست کا نتیجہ ہے اور اس کی حوالگی کا قانونی عمل جاری ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان گوپال باگلے نے مالیا کی گرفتاری پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہند کی برطانیہ حکومت سے مالیا کی حوالگی کی درخواست کے نتیجہ میں ہوئی ہے۔ برطانیہ میں حوالگی کا قانونی عمل جاری ہے۔ دونوں حکومتیں اس بارے میں ایک دوسرے کے رابطے میں ہیں۔

ہندوستان کے 'بھگوڑے' وجے مالیا لندن میں گرفتار، کچھ ہی دیر میں ملی ضمانت

وجے مالیا کی گرفتاری کانگریس کے دباو کا نتیجہ

وہیں،  کانگریس نے آج کہا کہ لندن میں شراب کے کاروباري وجے مالیا کی گرفتاری نریندر مودي حکومت پر مسلسل دباؤ کا نتیجہ ہے۔ کانگریس کے ترجمان رنديپ سنگھ سورجےوالا نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ بینکوں کے ہزاروں کروڑ روپے قرض غبن کرکے فرار وجے مالیا کو وطن واپس لانے کے لئے کانگریس مودی حکومت پر مسلسل دباؤ بنا رہی ہے۔اسی دباؤ میں حکومت نے اس سال فروری میں وجے مالیا کی حوالگی کے لئے برطانوی حکومت سے درخواست کی تھی۔ گرفتاری کے بعد وجے مالیا کی ضمانت منظور ہونے پر کانگریسی لیڈر نے کہا کہ اس معاملے میں حکومت لوگوں کو گمراہ کر رہی ہے۔ انهوں نے کہاکہ "ایک گھنٹے کے اندر وجے مالیا کی ضمانت منظور ہو گئی۔ لہذا حکومت کو ہندوستانیوں کو گمراہ نہیں کرنا چاہئے"۔  دوسری جانب لندن میں اپنی گرفتاری پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے وجے مالیا نے کہا کہ ہندوستانی میڈیا ہمیشہ کی طرح معاملے کو بڑھا چڑھا کر پیش کر رہا ہے۔شیڈول کے مطابق حوالگی کے سلسلے میں آج سماعت شروع ہونی تھی۔

مالیہ کی گرفتاری کارروائی کا حصہ ہے کسی کو بھی بخشا نہیں جائے گا: وزیر خزانہ

دوسری طرف،  حکومت نے آج کہا ہے کہ بڑے کاروباری وجے مالیہ کی برطانیہ میں گرفتاری اور ضمانت پر چھوڑا جانا کارروائی کا حصہ ہے، ہمیں اس عمل پر خوشی ہے ہم معاشی مجرموں کو انصاف کے حوالے کرکے اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔ یہ بات مالیات کے وزیر مملکت سنتوش کمار گنگوار نے یہاں اخباری نمائندوں کو بتائی۔ انہوں نے کہا ’’ہماری حکومت نے ایک بات طے کر رکھی ہے جتنے بھی غلط کام کرنے والے ہیں انہیں قانون کا سامنا کرنا ہوگا ۔ ہمیں اس بات کا یقین ہے کہ اگر میں بھی غلط کروں گا تو قانون مجھے بھی نہیں بخشے گا‘‘۔ حوالگی کے معاملہ پر انہوں نے کہا کہ باہمی چینلوں پر بات چیت جاری ہے اور ہمیں مثبت نتائج کی امید ہے۔

ہندوستانی حکومت نے پچھلے سال مالیہ کا پاسپورٹ منسوخ کردیا تھا اور فروری میں انگلینڈ سے مالیہ کی حوالگی کی درخواست کی تھی جن پر بنکوں کا قرض ادا نہ کرنے اور کالے دھن کو سفید بنانے کے الزامات ہیں۔ مالیہ جو راجیہ سبھا کے رکن بھی ہیں پچھلے سال اس وقت ہندوستان چھوڑ کر چلے گئے تھے جب بنکوں نے اپنے 9 ہزار کروڑ روپے کا قرض وصولنے کی کوشش کی تھی۔ مالیہ کی کمپنی کنگ فشر ائرلائنز کو اسٹیٹ بنک اور دیگر 10 بنکوں نے 7200 کروڑ قرض دے رکھا ہے جو اس نے واپس نہیں کیا اور اس میں سے 4 ہزار کروڑ کی رقم ماریتیس اور کیمین جزائر میں منتقل کردی اور کمپنی کو دیوالیہ دکھا دیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز