گجرات میں مسلمانوں کی 10 فیصد آبادی ، مگر ان کا سیاسی قد کچھ بھی نہیں ، جانیں آخر کیا ہے اس کی وجہ ؟

Nov 10, 2017 09:44 PM IST | Updated on: Nov 10, 2017 09:44 PM IST

احمد آباد :  گجرات میں ویسے تو مسلمانوں کی آبادی اچھی خاصی ہے اور کئی سیٹوں پر مسلمانوں کا دبدبہ بھی ہے ، اس کے باوجود مسلم امیدوار جیت کر گجرات اسمبلی میں نہیں پہنچ پاتے ہیں۔ عوام کی نگاہ میں جہاں کانگریس اور بی جے پی اس کیلئے ذمہ دار ہیں ، وہیں تقسیم کاری کو اس کی وجہ مانا جا رہا ہے ۔بھلے ہی مسلم ووٹر گجرات کے مختلف حصوں میں موجود 18 سیٹوں پر امیدواروں کے ہار جیت کا فیصلہ کرتے ہیں ، لیکن مسلمانوں کے مسئلہ کو اٹھانے کے لئے گجرات اسمبلی میں صرف اور صرف دو مسلم ممبران اسمبلی ہی موجود ہیں ۔

گجرات کے مسلمانوں کا سیاسی قد کو کم کرنے کے لئے کانگریس اور بی جے پی دونوں سياسی پارٹیوں پر الزام لگایا جا رہا ہے ، لیکن احمدآباد میں ہونے والا ڈليمٹیشن ( تقسیم کاری) گجرات کے مسلمانوں کا سیاسی قد کو کم کرنے میں کافی اہم کردار ادا کرتا ہوا نظر آ رہا ہے۔

گجرات میں مسلمانوں کی 10 فیصد آبادی ، مگر ان کا سیاسی قد کچھ بھی نہیں ، جانیں آخر کیا ہے اس کی وجہ ؟

گزشتہ سال ہونے والے احمد آباد ميونسيپل کارپوریشن کے الیکشن سے پہلے گجرات کی بی جے پی حکومت نے ڈليميٹیشن کر کے لوگوں کے ووٹ کو بانٹنے کا فیصلہ کیا ، جس کو لے کر کانگریس نے ایک لمبی قانونی لڑی ۔ اس سلسلے میں گجرات کانگریس کے ترجمان بدرالدین شیخ نے کہا کہ اس نئے ڈی لمیٹیشن کی وجہ سے مسلم ووٹروں کو کافی نقصان ہواہے۔ انہوں نے جان کاری دی کہ بی جے پی نے ڈی لميٹیشن کو لے کر جو قانون خود بنائے ہیں ، اس کو طاق پر رکھ کر اپنی من مانی کی ہے ۔ بدرالدین شیخ نے احمد آباد کے کئی علاقوں کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ جہاں پرمسلمانوں کی آبادی زیادہ تھی ، اس علاقہ کے ووٹ کو کاٹ کر کسی دوسرے علاقہ میں شامل کر دیا جاتا ہے ، جس سے ہمارے ووٹ کا کوئی فائدہ نہیں ہوتا۔

ڈی لمیٹیشن کو لے کر احمد آباد کے سینئرصحافی حبیب شیخ کا کہنا ہے کہ یقینا اگر کسی کو سب سے زیادہ نقصان ہوا ہے تو وہ ہے مسلمان ہیں ۔ حبیب شیخ نے کہا کہ مسلمانوں کے سیاسی قد کو کم کرنے کے لئے کہیں نہ کہیں کانگریس بھی ذمہ دار ہے۔ کیونکہ جب احمدآباد میں ڈی لمیٹیشن ہو رہا تھا، اس وقت کانگریس نے اس کی مخالفت نہیں کی ۔ انہوں نے کہا کہ کچھ سیٹوں پرمسلمانوں کا دبدبہ ہونے کے بعد بھی وہ سیٹ مسلمانوں کے ہاتھ میں نہیں آتی ، کیونکہ وہ سیٹ ریزرو ہوتی ہے ۔

احمد آباد کے دانيلمڑا اسمبلی سیٹ پرمسلمانوں کی اچھی خاصی آبادی ہے ، اس کے باوجود اس سیٹ کو ریزرو کر دیا گیا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے کہا کہ گجرات میں ہندوتو کو لے کر ایک ماحول بنا دیا گیا ہے، جس کی وجہ سے بھی مسلمانوں کا سیاسی قد کافی کم ہوا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز