مالیگاوں : مدرسہ چشمہ گلاب کے دو طالب علموں مسعود عامر اور ارباز خان کی تالاب میں ڈوب کر موت

Oct 19, 2017 02:36 PM IST | Updated on: Oct 19, 2017 02:36 PM IST

مالیگاؤں : مالیگاؤں شہر میں 300 سے زیادہ دینی مدارس ہیں۔ ان مدارس میں پورے ملک کے الگ الگ حصوں سے طلبہ تعلیم حاصل کرنے کے لئے داخلہ لیتے ہیں۔ گزشتہ روز شہر کے مدرسہ چشمہ گلاب کے دو طالب علم مسعود عامر اور ارباز خان جن کی عمر تقریباً 12سے15 سال بتائی جا رہی ہے ، وہ ایک تالاب میں نہاتے وقت ڈوب گئے ۔

یہ دونوں حفظ کے طالب علم تھے اور صبح فجر کی نماز اور اپنا سبق یاد کرنے کے بعد غسل کے لئے سائنہ پہاڑیوں کے درمیان واقع ایک تالاب پر گئے تھے، جہاں نہاتے وقت ان دونوں مدرسے کے طالب علموں کی ڈوبنے سے موت واقع ہو گئی ۔ ان کے ڈوبنے کی خبر جیسے ہی شہر کے الگ الگ حصوں میں پہنچی تو فائر بریگیڈ کے عملہ کے ساتھ سینکڑوں کی تعدا دمیں لوگ تالاب پر پہنچے۔ بہت کوششوں کے بعد لاشوں کو باہر نکالا گیا۔

مالیگاوں : مدرسہ چشمہ گلاب کے دو طالب علموں مسعود عامر اور ارباز خان کی تالاب میں ڈوب کر موت

مدرسہ کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ یہ تالاب نہایت خطرناک ہے۔ یہاں پر اس سے پہلے 12 اموات ہوچکی ہیں اور آج کی دو اموات مدرسے کے طلبہ کی ہوئی ہے ، جس سے شہر کے لوگوں کو بڑا صدمہ پہنچا ہے۔ عوام نے مطالبہ کیا ہے کہ محکمہ جنگلات اس تالاب کے اِرد گرد تاروں کی دیوار بنائے اور ساتھ ہی ساتھ آس پاس کی پہاڑیوں میں ہو رہی غیر قانونی کھدائی کو بند کروائے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز