جیل میں بند متنازع سادھوی جے شري گری اسپتال سے فرار ، پولیس اہلکاروں سمیت چھ افراد گرفتار

Jun 15, 2017 06:57 PM IST | Updated on: Jun 15, 2017 06:57 PM IST

احمد آباد: گجرات میں احمد آباد کی سابرمتی سینٹرل جیل سے ایک نجی اسپتال میں علاج کے لئے لائی گئی متنازع سادھوی اور شمالی گجرات کے مكتیشور مٹھ کی سابق مہنت سادھوی جے شري گری کے کل شام پولیس کو دھوکہ دیکر فرار ہونے کے معاملے میں چار پولیس اہلکاروں سمیت چھ افراد کوگرفتارکیا گیا ہے اگرچہ سادھوی اب تک پکڑی نہیں جا سکی ہے۔ کرائم برانچ کے آئی جی جے کے بھٹ نے آج صحافیوں کو یہ اطلاع دی۔

انہوں نے بتایا کہ سادھوی کو پکڑنے کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ پکڑے جانے والوں میں اسکی ایک واقف کار عورت اور ایک شاگرد شامل ہیں جبکہ  گزشتہ چار جون سے 14 جون تک کے لئے ملے پیرول کے دوران ان پر نگرانی کے لئے تعینات دو خواتین پولیس اہلکاروں سمیت چار پولیس والوں کو بھی گرفتارکیا گیا ہے۔ وہ شہر کے تھل تیج علاقے میں ایس جي ہائی وے کے نزدیک واقع جائڈس كیڈلا اسپتال سے شہر کے هماليہ مال گئی تھیں اور وہاں فلم دیکھنے کے دوران فرار ہو گئیں۔

جیل میں بند متنازع سادھوی جے شري گری اسپتال سے فرار ، پولیس اہلکاروں سمیت چھ افراد گرفتار

پولیس کنٹرول روم سے ملی اطلاع کے مطابق 47 سالہ سادھوی جس کے خلاف تنہا بناس كانٹھا ضلع میں دھوكھادہي، قتل، شراب رکھنے جیسے آٹھ سے زیادہ معاملے درج ہیں ، کو پانچ کروڑ روپے کے سونے کی دھوكادہي کے معاملے میں پالن پور میں اسکی رہائش گاہ سے جنوری میں پکڑا گیا تھا۔ اس کے گھر سے 100 گرام والے سونے کے 24 بسکٹ، سوا کروڑ سے زیادہ کی نقدی بھی برآمد ہوئی تھی۔ اس کے بعد اسے جوناگڈھ کے ایک مشہور مندر کے مینجمنٹ سے بھی ہٹا دیا گیا تھا اور مهامنڈلیشور کی ڈگری بھی چھین لی گئی تھی۔

وہ 2008 میں مكتیشور مٹھ کے اس وقت کے مہنت سنجے گری کے قتل کے معاملے میں بھی مطلوب تھی۔ اس کے پاس سے شراب بھی برآمد ہوئی تھی۔

اس دوران اسے دوبارہ پكڑنے کے لئے چھاپہ کی کارروائی تیز کر دی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز