فلیٹ میں 8 بچیوں کو یرغمال بنا کر گرم چاقو سے داغتی تھی خاتون:گوا پولیس

گوا کے واسکو سٹی کے ایک فلیٹ میں 8 بچیوں کو یرغمال بناکر رکھنے اور انہیں ہراسں کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔پولیس نے بتایا کہ فلیت میں بچیوں کے جسم کو مبینہ طور پر چاقو سے داغنے کے ساتھ ساتھ کئی دیگر ٹاؤرچر کیا جا رہا تھا۔

Apr 17, 2018 12:38 PM IST | Updated on: Apr 17, 2018 02:41 PM IST

گوا کے واسکو سٹی کے ایک فلیٹ میں 8 بچیوں کو یرغمال بناکر رکھنے اور انہیں ہراسں کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔پولیس نے بتایا کہ فلیت میں بچیوں کے جسم کو مبینہ طور پر چاقو سے داغنے کے ساتھ ساتھ کئی دیگر ٹاؤرچر کیا  جا رہا تھا۔

واسکو پولیس تھانے کے انسپکٹر نولسکو راپوسو نے بتایاکہ چھ سے 12 سال کی عمر کی ان بچیوں کو65 سال کی ایک خاتون مبینہ طور پر پائپ سے بھی پیٹتی تھی۔اس خاتون کا دعوی ہے کہ اس نے لڑکیوں کو گود لیا ہے۔

فلیٹ میں 8 بچیوں کو یرغمال بنا کر گرم چاقو سے داغتی تھی خاتون:گوا پولیس

علامتی تصویر

پولیس نے شہر کے بائنا علاقے میں واع فلیٹ سے ان لڑکیوں کو اتوار کو این جی او کی مدد سے چھڑایا اور وینس حبیب نام کی خاتون کو گرفتار کیا۔راپوسو نے کہا کہ لڑکیوں کی مشکل تب ختم ہوئی اتوار کو چرچ سروس کے دوران مقامی لوگوں نے ایک لڑکی کے ہاتھ پر زخم کے نشان دیکھے۔انہوںنے بتایا کہ لڑکی نے مقامی لوگوں کو اپنی روداد سنائی۔جس کے بعد انہوں نے پولیس کو اطلاع دی۔

راپوسو نے کہا،"پولیس نے حبیب کے فلیٹ پر چھاپہ ماری کی اور پایا کہ سات لڑکیاں وہاں بند رکھی گئی ہیں۔لڑکیوںنے پولیس کو بتایا کہ ملزم خاتون انہیں پائپ سے پیٹتی تھی اور چھوٹی چھوٹی باتوں پر ایک گرم چاقو سے ان کے ہاتھ ۔پاؤں داغتی تھی"۔انہوں نے بتایا کہ حبیب کےخلاف آئی پی سی اور گوا اطفال قانون کی دفعات مین کیس درج کر کے معاملے کی جانچ کی جا رہی ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز