افراز قتل معاملہ: ابوعاصم اعظمی نے کہا، اب مسلمانوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو گیا

سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر ابو عاصم اعظمی نے کہا ہے کہ راجستھان میں وحشتناک قتل اور لاش کو زندہ نذر آتش کرنے کا واقعہ انسانیت سوز ہے اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

Dec 09, 2017 09:15 PM IST | Updated on: Dec 09, 2017 09:15 PM IST

ممبئی۔ راجستھان میں وحشتناک قتل اور لاش کو زندہ نذر آتش کرنے کا واقعہ انسانیت سوز ہے اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ اب مسلمانوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا ہے کیونکہ لوجہاد اور ہجومی تشدد کی آڑ میں مسلم نوجوانوں کو فرقہ پرست تنظیمیں نشانہ بنا رہی ہیں اور حکومتیں تماشائی بنی ہوئی ہیں۔ اگر جلد ہی کچھ نہیں کیا گیا تو قانون کی حکمرانی قائم نہیں رہے گی اور فرقہ پرست قانون کی اس طرح دھجیاں اڑاتے رہیں گے۔ راجستھان کے سفاک قاتلوں پر سخت کارروائی کی جائے اور مقتول کے ورثاء کو معاوضہ دیا جائے۔ اتنا ہی نہیں سرکار مقتول کے ورثاء کے مطالبہ پر ملزمین کو سر راہ تختہ دار پر لٹکا دے۔ اس قسم کا مطالبہ آج یہاں سماجوادی پارٹی ممبئی ومہاراشٹر کے صدرور کن اسمبلی ابوعاصم اعظمی نے کیا ۔

انہوں نے کہا کہ جب سے بی جے پی حکومت بر سر اقتدار آئی ہے اس وقت سے ہی فرقہ پرست مسلمانوں بالخصوص اقلیتوں دلتوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔ کبھی ٹرینوں میں مسلمانوں باشرع علماء کو زدوکوب کیا جارہا ہے تو کبھی سر راہ جئے شری رام کہہ کر زدوکوب کیا جا رہا ہے۔ انہیں جبرا ًشرکیہ کلمات پر مجبور کیا جارہا ہے ایسے میں فرقہ پرستوں کے حوصلے مزید بلند ہوگئے ہیں کیونکہ حکومت نے ایسی سخت کارروائی نہیں کی ہے جس سے فرقہ پرستوں کو یہ محسوس ہو کہ حکومت اس معاملے میں سنجیدگی سے کارروائی کرے گی ۔

افراز قتل معاملہ: ابوعاصم اعظمی نے کہا، اب مسلمانوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو گیا

سماجوادی پارٹی ممبئی ومہاراشٹر کے صدرور کن اسمبلی ابوعاصم اعظمی: فائل فوٹو۔

انہوں نے کہا کہ یہ انتہائی افسوس کا مقام ہے کہ بی جے پی نے قانون کی دھجیاں اڑانے والوں کے ساتھ کوئی سخت موقف اختیار نہیں کیا ہے۔ وزیر اعظم مودی جی صرف بیان بازی کر تے ہیں لیکن ان کے بیان بازی کے بعد بھی ہجومی تشدد اور فرقہ وارانہ تشدد تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ صوبائی حکومتیں اس پر سنجیدہ نہیں ہیں اور مرکز بھی اس سلسلے میں کوئی کارروائی نہیں کر رہا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز