گنپتی اور نوراتری کے ساتھ محرم اور فجر کے اذان میں بھی لاؤڈ اسپیکر کی اجازت ہو: ابو عاصم

Jul 29, 2017 04:15 PM IST | Updated on: Jul 29, 2017 04:15 PM IST

ممبئی۔ سماجوادی پارٹی ممبئی و مہاراشٹر کے صدرو رکن اسمبلی ابوعاصم اعظمی نے ایوان اسمبلی میں مہاراشٹر کے وزیر اعلی دیویندر فڑنویس کے اس قدم کو قابل مستحسن قرار دیتے ہوئے بتایا کہ جس طرح سے وزیر اعلی دہلی جا کر گنپتی میں دیر رات تک کے لاؤڈاسپیکر کے استعمال کی اجازت اور رعایت طلب کر نے سے متعلق اقدامات کررہے ہیں میں اس سے بہت خوشی محسوس کر رہا ہوں کیونکہ یہ ملک قومی یکجہتی کا گہوارہ ہے۔ یہاں ہندو مسلم سکھ عیسائی اور پارسی سب مل جل کر رہتے ہیں۔ یہ ہماری رنگارنگ تہذیب کا ایک حصہ ہے اسی لئے میں یہ مطالبہ کرتا ہوں کہ جس طرح سے گنپتی اور نوراتری پر لاؤڈ اسپیکر کے استعمال میں رعایت طلب کرنے کا وزیر اعلی اقدام کر رہے ہیں۔ اسی طرح سے فجرکی اذان جو کہ سال میں تقریباً صرف 5 ماہ 6 بجے سے پہلے دی جاتی ہے اور جو صرف 2 منٹ کی ہوتی ہے اس اذان میں بھی قانونی طریقے سے لاؤڈ اسپیکر کی اجازت دی جائے کیونکہ اس سے متعلق کافی پریشانیوں کا سامنا مسلمانوں کو کرنا پڑتا ہے۔ اسی طرح سے محرم الحرام میں بھی رات میں لاؤڈ اسپیکر کے استعمال کو یقینی بنایا جائے اور وعظ و بیانات کیلئے لاؤڈ اسپیکر کے استعمال کو اجازت دی جائے اور ان کے اوقات میں بھی اضافہ کیا جائے تاکہ محرم الحرام سمیت ملک کے دیگر تہوار امن وامان اور بخوشی لوگ منا سکیں۔ فجر اذان میں رعایت کی کافی ضرورت ہے کیونکہ یہ مسلمانوں کا استھا کا سوال ہے اس لئے وزیر اعلی اس کیلئے بھی کوشش کریں تو بہت بہتر ہوگا ۔

ابوعاصم اعظمی نے وزیر اعلیٰ سے کہا ہے کہ ملک میں قومی یکجہتی اور آپسی بھائی چارگی کو فروغ دینے کیلئے مشاعرہ اور قوی سمیلن اہم رول ادا کرتے ہیں اور یہ ہماری تہذیب کا حصہ بھی رہا ہے لیکن بد قسمتی سے مشاعرے اور قوی سمیلن ختم ہوتے جارہے ہیں اور اس کی اہم وجہ رات میں ان پر جلدی پابندیاں عائد کردینا اور رات دس بجے کے بعد مشاعرہ بند کرادینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میری سرکار سے یہ درخواست ہے کہ ان تقریبات کو رات دیر گئے تک یعنی ساڑھے بارہ بجے تک اس کی اجازت دی جائے جبکہ ہمارے شہر میں شراب خانے، پب اور دوسری برائیاں رات بھر جاری رہتی ہیں جس سے برائیاں پھیلتی ہیں جب کہ قوی سمیلن تو ہمارے تہذہب کا ایک حصہ ہے اس لئے اس کے پروگرام میں حکومت خصوصی رعایت دے تاکہ مشاعرے اور قوی سمیلن اس ملک میں زندہ رہ سکیں ۔

گنپتی اور نوراتری کے ساتھ محرم اور فجر کے اذان میں بھی لاؤڈ اسپیکر کی اجازت ہو: ابو عاصم

ابو عاصم اعظمی: پی ٹی آئی، فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز