احمد آباد ميونسپل کارپوریشن کا 6551 کروڑ کا بجٹ پیش ، مسلم علاقے کو نظر انداز کرنے کا الزام

Feb 03, 2017 07:36 PM IST | Updated on: Feb 03, 2017 07:37 PM IST

احمد آباد۔ احمد آباد ميونسپل کارپوریشن کا 2017-18 کا بجٹ اسٹینڈگ کمیٹی کے چیئرمین پروین پٹیل نے پیش کیا۔ 6551 کروڑ کے بجٹ میں احمد آباد شہر کو ترقی کی نئی اونچائيوں تک پہنچانے اور شہریوں کو نئی سہولیات دینے کا وعدہ کیا گیا ۔ اسمارٹ احمد آباد کے نعرے سے پیش ہونے والے اس بجٹ میں كارپوریشن نے صفائی اور ٹریفک کے مسئلہ سے نمٹنے کے لئے خاص انتظامات کئے ہیں۔ جہاں ایک طرف احمد آباد کے لوگوں کے لئے پراپرٹی ٹیکس میں اضافہ نہ ہونے کا اعلان کیا گیا ہے وہیں اس بجٹ کو اپوزیشن آنے والے انتخابات کو ذہن میں رکھ کر پیش کرنے کا الزام لگا رہا ہے۔

کارپوریشن کے بجٹ میں جہاں ایک طرف نئی نئی سہولیات کا اعلان کیا گیا ہے، وہیں احمد آباد کے جوہاپورا علاقے میں گزشتہ پانچ سال کےڈیولپمنٹ اور صفائی کی مانگ کو ایک بار پھر سے نظر انداز کیا گیا ہے ۔ اس سلسلے میں علاقے کے ميونسپل كاؤنسلر شمير خان نے کہا کہ ہمارے مطالبات کو بار بار صرف اس لئے نظر انداز کیا جاتا ہے کیونکہ ہم مسلم علاقے کی نمائندگی کرتے ہیں ۔

احمد آباد ميونسپل کارپوریشن کا 6551 کروڑ کا بجٹ پیش ، مسلم علاقے کو نظر انداز کرنے کا الزام

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز