عمر قتل کیس : معاوضہ اور ملزموں کی گرفتاری تک پوسٹ مارٹم سے اہل خانہ کا انکار ، مسلم تنظیمیں بھی متحد

راجستھان کے الور ضلع میں گئو پالک عمر خان کے قتل کے معاملہ میں مسلم تنظیموں نے ایک بڑا فیصلہ کیا ہے ۔

Nov 13, 2017 09:34 PM IST | Updated on: Nov 13, 2017 09:38 PM IST

جے پور : راجستھان کے الور ضلع میں گئو پالک عمر خان کے قتل کے معاملہ میں مسلم تنظیموں نے ایک بڑا فیصلہ کیا ہے ۔ عمر کے اہل خانہ کو انصاف دلانے اور گئو رکشکوں کے خلاف کڑی کارروائی کرنے کیلئے متعدد تنظیموں نے ایک کمیٹی بناتے ہوئے تین اہم مطالباب کئے ہیں اور ان کے پورا ہونے تک عمر کا پوسٹ مارٹم نہیں کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔

جے پور کے مسلم مسافر خانہ میں اس کمیٹی کی میٹنگ کے بعد حکومت سے تھانہ انچارج کو سسپینڈ کرنے ، اہل خانہ کو 50 لاکھ روپے کا معاوضہ دینے اور سبھی ملزموں کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ کمیٹی کے رکن عبد اللطیف نے کہا کہ جب تک مطالبات تسلیم نہیں کئے جاتے ہیں ، اس وقت تک لاش کا پوسٹ مارٹم نہیں ہونے دیں گے۔

عمر قتل کیس : معاوضہ اور ملزموں کی گرفتاری تک پوسٹ مارٹم سے اہل خانہ کا انکار ، مسلم تنظیمیں بھی متحد

اہل خانہ کا دعوی ، عمر کو گئو رکشکوں نے قتل کیا

عمر کے چچا الیاس اور رزاق نے بھی لاش کا پوسٹ مارٹم کروانے اور لاش لینے سے انکار کردیا ہے ۔ اہل خانہ کا مطالبہ ہے کہ پہلے سبھی ملزموں کو گرفتار کیا جائے اور انہیں انصاف ملے ، تبھی وہ لاش لیں گے ۔ اہل خانہ کا کہنا ہے کہ قتل کرنے والے گئو رکشک ہیں ، حکومت ان کی غنڈہ گردی ختم کرے ۔ اہل خانہ نے کہا کہ عمر گائے اسمگلر نہیں بلکہ گئو پالک تھا۔

آٹھ بچوں کا باپ تھا عمر

عمر کے بھائی خورشید نے کہا کہ اس کا بھائی گائے اسمگلر نہیں تھا ۔ وہ گائیں پالتا تھا ۔ اس کے آٹھ بچے ہیں ۔ اس کے قتل سے کنبہ پر دکھوں کا پہاڑ ٹوٹ پڑا ہے۔ خورشید نے مزید کہا کہ جب ہمیں انصاف ملے گا ، تبھی ہم پوسٹ مارٹم کروائیں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز