فوج بھرتی پرچہ لیک : 350 طالب علم حراست میں، 18 لوگوں کو پولیس نے کیا گرفتار

Feb 26, 2017 03:16 PM IST | Updated on: Feb 26, 2017 03:16 PM IST

ممبئی : مہاراشٹر میں فوج بھرتی امتحان کے لیک پرچہ امتحان کےاصل پرچہ سے مل گئے ہیں ، جس کے بعد پولیس نے 18 افراد کو گرفتار کیا ہے۔ خیال رہے کہ پیپر لیک ہونے کے بعد تھانے پولیس نے کئی جگہوں پر چھاپے ماری کی تھی اور 18 افراد کو حراست میں لے کر پوچھ گچھ کی۔ اس معاملہ میں تھانے پولیس نے 350 طالب علموں کو الگ الگ جگہوں سے پکڑ ا، جنہوں نے لیک ہوئے پیپر کو حاصل تھا۔

دراصل تھانے کرائم برانچ کو مہاراشٹر کے کئی شہروں میں فوج بھرتی کے لئے اتوار کو ہونے والی امتحان سے پہلے پرچہ لیک ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ اس کے بعد کرائم برانچ نے معاملہ کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے مہاراشٹر اور گوا میں کئی مقامات پر دیر رات سے چھاپہ ماری کی اور 18 افراد کو حراست میں لیا۔

فوج بھرتی پرچہ لیک : 350 طالب علم حراست میں، 18 لوگوں کو پولیس نے کیا گرفتار

یہ تمام لوگ فوج بھرتی کی اکیڈمی چلاتے ہیں۔ الزام ہے کہ یہی پرچہ لیک کرتے تھے۔ تھانے کرائم برانچ کے مطابق یہ چھاپے ماری پونے، ناگپور اور گوا کی کئی جگہوں پر کی گئی۔

چھاپہ ماری کے دوران حیران کرنے والی بات یہ سامنے آئی کہ جن 18 لوگوں کو تھانے پولیس نے حراست میں لیا تھا، ان مین دو لوگ آرمی بیک گراؤنڈ کے ہیں۔ تاہم دونوں ہی لوور رینک کے افسر ہیں، لیکن تھانے پولیس کا کہنا کہ آرمی کے افسران کی ملی بھگت کے بغیر یہ ممكن نہیں ہے۔

خیال رہے کہ آرمی کا سب سے بڑا بیس مہاراشٹر میں ناگپور اور پونے میں ہے اور گوا کا جو آرمی بیس ہے وہ گوا میں ہے، اس لئے پولیس نے ان 3 جگہوں پر چھاپہ ماری کی ۔چھاپہ ماری کے لیے کرائم برانچ نے تقریبا 10-15 ٹیمیں بنائی تھیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز