اورنگ آباد میں مینا بازار کی روایت کو زندہ کرنے کی کوشش، رمضان میں چوڑی بازار لگانے کا فیصلہ

May 27, 2017 03:55 PM IST | Updated on: May 27, 2017 03:55 PM IST

اورنگ آباد۔  اس سال رمضان کے مہینے میں  روزہ داروں کی سہولت کے لیے شاہ گنج علاقے میں  ایکتا چوڑی بازار لگایا جارہا ہے ۔ اس بازار کی ذمہ داری  ایکتا ہاتھ گاڑی چالک مالک سنگھٹنا نے لی ہے ۔ سنگھٹنا کا دعوی ہے کہ رمضان میں غریبوں کی عید کو یقینی بنانے کے لیے  یہ بازار لگایا جا رہا ہے ۔  اورنگ آباد کا مسلم اکثریتی علاقہ  شاہ گنج کے بس اسٹینڈ کے احاطے میں رمضان المبارک میں مینا بازار لگایا جاتا تھا جو کافی مقبول تھا۔ دور دراز علاقوں سے لوگ  مینا بازار میں خرید و فروخت  کے لیے  پہنچتے تھے لیکن 2007 سے مینا بازار بند ہے ۔ اب ایکتا ہاتھ گاڑی چالک مالک سنگھٹنا نے اسی مقام پر چوڑی بازار لگانے کا فیصلہ کیا ہے ۔

سنگھٹنا کا دعوی ہے کہ اس نے تمام ضروری کارروائی مکمل کرلی ہے اور سنگھٹنا کو بازار لگانے کی اجازت بھی مل گئی ہے ۔ سنگھٹنا کا کہنا ہے کہ ایکتا چوڑی بازار میں آنے والے بیوپاریوں اورخریداروں کو تمام سہولیات فراہم کی جائیگی۔ لائٹ ، پانی اور سیکورٹی کا معقول انتظام کیا جائیگا۔ چوڑی بازار میں  جملہ 120 اسٹال لگانے کا منصوبہ ہے ۔ غریبوں کی مدد اور انھیں بھی عید کی خوشیوں میں شامل کرنے کے مقصد سے شروع ہونے والا چوڑی بازار اپنے مقصد میں کس حد تک کامیاب رہتا ہے ،  یہ تو بازار کے  شروع ہونے اور تاجروں کے ریسپانس کے بعد ہی پتہ چلے گا۔

اورنگ آباد میں مینا بازار کی روایت کو زندہ کرنے کی کوشش، رمضان میں چوڑی بازار لگانے کا فیصلہ

ری کمنڈیڈ اسٹوریز