آبروریزی کے الزام میں بی جے پی لیڈر حکم سنگھ گرفتار، پہلے بھی جا چکا ہے جیل

Apr 01, 2017 01:42 PM IST | Updated on: Apr 01, 2017 01:43 PM IST

جے پور۔ راجستھان میں جالور کی كرڑا پولیس نے آبروریزی کے ملزم بی جے پی لیڈر حکم سنگھ راؤ کو ہفتے کی صبح گرفتار کر لیا۔ حکم سنگھ راؤ بی جے پی کسان مورچہ میں ریاستی رکن ہیں۔ متاثرہ نے بی جے پی لیڈر سمیت تین لوگوں پر گینگ ریپ کی ایف آئی آر درج کروائی، جس کے بعد سے ہی بی جے پی لیڈر حکم سنگھ راؤ فرار چل رہا تھا۔

پولیس نے ملزم حکم سنگھ کو حراست میں 15 گھنٹے کی طویل پوچھ گچھ کے بعد ہفتہ کو گرفتار کر لیا۔ پولیس نے بی جے پی لیڈر راؤ کی کال ڈٹیل كھنگالی جس میں سامنے آیا کہ ملزم بی جے پی لیڈر راؤ ایک طویل مدت سے متاثرہ کے رابطے میں تھا۔ پولیس کو موبائل میں ایس ایم ایس بھی ملے ہیں۔ جمعہ دیر تک اے ایس پی جسارام ​​بوس نے بھی ملزم راؤ سے طویل پوچھ گچھ کی، جس کے بعد ہفتے کی صبح اسے گرفتار کر لیا گیا۔

آبروریزی کے الزام میں بی جے پی لیڈر حکم سنگھ گرفتار، پہلے بھی جا چکا ہے جیل

ایس پی كليان مل مینا نے بتایا کہ لڑکی نے تین لوگوں کے خلاف گینگ ریپ کی ایف آئی آر پولیس تھانے میں درج کروائی تھی، جس کے بعد سے ہی پولیس بی جے پی لیڈر حکم سنگھ راؤ کی تلاش کر رہی تھی۔ ساتھ ہی انہوں نے بتایا کہ اس معاملے میں ابھی تک ایک نوجوان کا نام فرضی پایا گیا۔ وہیں دوسرے نوجوان کا کردار بھی نہیں ملا، ایسے میں اب بی جے پی لیڈر سے پوچھ گچھ کے بعد پولیس معاملے کی پوری سچائی کا انکشاف کرے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز