مودی کے تین سالہ دور میں فرقہ پرستی ، ذات پات اور منہ بھرائی کی سیاست کا خاتمہ ہوا، امت شاہ کا دعویٰ

Jun 17, 2017 05:41 PM IST | Updated on: Jun 17, 2017 05:41 PM IST

ممبئی: بھارتیہ جنتاپارٹی کے قومی صدر امت شاہ نے آج یہاں کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی کی قیادت میں بی جے پی کی حکومت نے گزشتہ تین سال کے دوران بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیااور ایک مستحکم سرکاربی جے پی اور وزیراعظم نے دینے کی کوشش کی ہے جبکہ غریبوں کو حکومت میں حصہ داری دی گئی ہے۔ امت شاہ نے اپنے 95ویں روزہ دورے کے دوران ممبئی کے سہ روزہ دورہ کے موقع پرجنوب وسطی ممبئی میں بھارتیہ جنتاپارٹی کے صدر دفتر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ فرقہ پرستی، ذات پات اور منہ بھرائی کی سیاست کوختم کرنے میں بی جے پی حکومت کوکامیابی ملی ہے۔

انہوں نے مزید کہاکہ ایک عام آدمی کو اقتدار سے جوڑنےکے ساتھ ساتھ انہیں ان کے حقوق دلانے اور دیہی علاقوں میں بجلی فراہمی اوررسوئی گیس دستیاب کرائی گئی ۔ بی جے پی صدر نے مرکز کی مودی حکومت کے تین سال کی کارکردگی کو 70 سالہ دور سے سب بہترین دور قرار دیتے ہوئے انہوں نے سرحد پر 'سرجیکل اسٹرائک کوقابل ستائش اقدام قراردیا ہے اوردعویٰ کیاکہ مودی ملک کی آزادی کے مقبول ترین لیڈرمانے جارہے ہیں۔

مودی کے تین سالہ دور میں فرقہ پرستی ، ذات پات اور منہ بھرائی کی سیاست کا خاتمہ ہوا، امت شاہ کا دعویٰ

انہوں نے کہاکہ صدرجمہوریہ کے الکشن کے لئے سبھی سیاسی پارٹیوں سے گفتگو کے بعد اتفاق رائے بنانے کی کوشش کی جا ئے گی اور اس سلسلے میں بی جے پی کے لیڈروں نے ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔ امت شاہ نے اس بات کی تردید کی کہ ملک کی موجودہ ترقی روزگار کے بغیر کی ترقی ہے بلکہ کہا کہ مودی حکومت نے ساڑھے سات کروڑ روزگار دیئے ہیں۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ کشمیر کا مسئلہ دو چار مہینے میں حل کیا جانے والا مسئلہ نہیں ہے، پھر بھی ہماری کوشش جاری ہے۔

انہوں نے پاکستان کے ساتھ تیسرے مقام پر عالمی سطح پر ہونے والے کھیل کود کے میچ میں حصہ نہ لینے کی تجویز کو مسترد کردیا۔ امت شاہ نے مہاراشٹر کی فڑنویس حکومت کی کارکردگی کی سراہنا کی اور کہا کہ مرکزی حکومت نے ہرممکن طریقے سے مدد کی ہے۔ شیوسینا کے ساتھ تعلقات پر انہوں نے تسلی بخش جواب نہیں دیاالبتہ کہاکہ آئندہ ریاستی الیکشن بی جے پی ایک ایک نشست پر جامع ومنصوبہ بند طریقے سے لڑے گی اور 2019 میں پارٹی نے 200 نشستوں کاہدف مقررکیا ہے اور اسے حاصل کرنے کی جدوجہد کی جائے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز