بی ایم سی مئیر انتخابات: رشتوں میں تلخی کے درمیان بی جے پی نے شیوسینا کو دی حمایت

Mar 04, 2017 07:11 PM IST | Updated on: Mar 04, 2017 07:11 PM IST

ممبئی۔ مہاراشٹر میں بی جے پی نے تعلقات میں تلخی آنے کے بعد بھی بالآخر شیوسینا کو حمایت دے دی ہے۔ ریاست کے وزیر اعلی دیویندر فڑنویس نے کہا ہے کہ بی جے پی بی ایم سی میں کسی عہدے کے لئے نہیں لڑے گی۔ انہوں نے کہا کہ ممبئی میں شفافیت کے ایجنڈے پر الیکشن لڑا اور عوام نے حمایت بھی دی۔ فڑنویس نے کہا کہ بی جے پی میئر اور ڈپٹی مئیر کا الیکشن بی ایم سی میں نہیں لڑے گی۔ انہوں نے صاف کیا کہ ہم مخالف پارٹی لیڈر بھی نہیں لڑیں گے۔ ہم شیوسینا کی حمایت کریں گے۔ شفافیت کے معاملے پر ہم کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

فڑنویس نے کہا کہ بی جے پی کی کور کمیٹی کے اجلاس میں میئر کے عہدے پر بھی بحث ہوئی۔ اس صورت میں کسی فریق سے مدد مل سکتی ہے۔ لیکن ہماری کور کمیٹی نے فیصلہ لیا ہے کہ شفافیت کے ایجنڈے پر یہ الیکشن لڑا گیا ہے۔ ایسے میں جوڑ توڑ سے عوام کے ووٹوں کی توہین ہو گی۔ فڑنویس نے کہا کہ ممبئی میں ایک ذیلی لوک آیکت ہونا چاہئے۔

بی ایم سی مئیر انتخابات: رشتوں میں تلخی کے درمیان بی جے پی نے شیوسینا کو دی حمایت

ممبئی میں اکثریت کے لئے ضروری 114 نشستیں کسی کو نہیں ملیں۔ دونوں فریقوں کو قریب اتنی ہی سیٹ ملی ہے۔ شیوسینا کو محض دو کونسلر زیادہ ملے ہیں۔

واضح رہے کہ 227 رکنی بی ایم سی میں شیوسینا 84 نشستیں جیت کر سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ہے۔ بی جے پی بھی 82 نشستیں جیت کر شیوسینا کے کافی قریب ہے۔ اس کے باوجود دونوں ہی پارٹیاں اکثریت (114 سیٹ) کے جادوئی اعداد و شمار سے کافی دور ہیں۔ 31 سیٹیں جیتنے والی کانگریس تیسرے نمبر پر ہے۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کو 9، مہاراشٹر نونرمان سینا 7 اور آزاد اسمبلی ارکان کے پاس 14 سیٹیں ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز