شیوسینا -کانگریس میں لفظی جنگ ، سنجے نروپم نے اتحاد کے امکان کو کیا مسترد

Feb 25, 2017 09:01 PM IST | Updated on: Feb 25, 2017 09:01 PM IST

ممبئی۔ بی ایم سی میں شیوسینا کے ساتھ اتحاد کے امکان کو کانگریس پارٹی نے مسترد کر دیا ہے۔ سابق ایم پی اور سینئرلیڈر گروداس کامت کی مخالفت کے بعد اب سنجے نروپم نے بھی ایسے کسی امکان سے صاف انکار کر دیا ہے۔ پارٹی کے ممبئی یونٹ کے صدر عہدے سے استعفی دے چکے نروپم نے کہا کہ شیوسینا کے کچھ لیڈروں نے ہم سے رابطہ کیا ہے ، لیکن ہم نے واضح طور پر کہا کہ ہم ایک فرقہ پرست پارٹی سے اتحاد نہیں کر سکتے جوکہ ذات اور مذہب کی بنیاد پر سیاست کرتی ہے۔ اس درمیان کانگریس کی جانب سے سرخ جھنڈی دکھائے جانے کے بعد ایسا لگ رہا ہے کہ بی ایم سی کے اقتدار پر قابض ہونے کے لئے شیوسینا اور بی جے پی کو پھر ساتھ آنا پڑ سکتا ہے۔

اس سے پہلے آج یہاں کانگریس کے سابق ممبر پارلیمنٹ اور مہاراشٹر میں پارٹی کے بڑے لیڈر گروداس کامت نے بھی شیوسینا سے اتحاد پر سخت اعتراض کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر شیوسینا کو حمایت دی تو عوام معاف نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم دونوں بھگوا جماعتوں کی تفرقہ  پھیلانے والی سیاست کے خلاف لڑے تھے۔ سابق مرکزی وزیر نے یہ بات کانگریس نائب صدر راہل گاندھی تک پہنچانے کی بات کہی۔ جمعہ کو مہاراشٹر کانگریس صدر اشوک چوہان کہہ چکے ہیں کہ شیوسینا کو بی ایم سی میں حمایت چاہئے تو اسے ریاستی حکومت میں بی جے پی کا ساتھ چھوڑ دینا چاہئے۔ شیوسینا کے ترجمان اور ایم پی سنجے راؤت نے سنجے نروپم کے بیان کو مسترد کردیا ہے۔انہوں نے دعویٰ کی کہ شیوسینا نے کانگریس کو کبھی پیشکش نہیں کی ہے۔

شیوسینا -کانگریس میں لفظی جنگ ، سنجے نروپم نے اتحاد کے امکان کو کیا مسترد

کانگریس لیڈر سنجے نروپم، فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز