باندرہ میں قبرستان کیلئے زمین الاٹ میں ٹال مٹول پر ہائی کورٹ نے ممبئی میونسپل کارپوریشن کو سنائی کھری کھری

Apr 13, 2017 10:33 PM IST | Updated on: Apr 13, 2017 10:33 PM IST

ممبئی(محی الدین ) ممبئی کے باندرہ علاقہ میں قبرستان کے لیے زمین الاٹ کرنے کے معاملی میں ممبئی میونسپل کارپوریشن کی ٹال مٹول پر بامبے ہائی کورٹ نے میونسپل کارپوریشن کو کھری کھری سنائی ہے۔ عدالت نے بی ایم سی سے کہا ہے کہ ایک طرف قبرستان کے لیے جگہ فراہم کرنے کا یقین دلاتے ہو اور دوسری جانب راہ فراراختیارکرتے ہو۔

ممبئی کے باندرہ ویسٹ علاقہ میں قبرستان کے لیے جگہ فراہم کرنے کے معاملہ میں شہری انتظامیہ کی تساہلی پر بامبے ہائی کورٹ نے سخت برہمی کا اظہار کیا ۔ اس معاملہ میں عرضی گزار فرزان قریشی کے وکیل اشرف احمد شیخ نے عدالت کو بتایا کہ بی ایم سی نے ایک مرتبہ پھر قبرستان کے لیے جگہ فراہم کرنے کے متعلق عذر پیش کیا ہے۔ہائی کورٹ نے قبرستان کے الاٹمنٹ کے معاملہ پر سخت رویہ اختیارکرتے ہوئے کہا کہ اگر بی ایم سی قبرستان کے لئے زمین فراہم نہیں کرتی ہے ، تو عدالت ایس پی اے بلاک (اے) کی 116 ایکڑ کی زمین پراسٹے لگا دے گی۔

باندرہ میں قبرستان کیلئے زمین الاٹ میں ٹال مٹول پر ہائی کورٹ نے ممبئی میونسپل کارپوریشن کو سنائی کھری کھری

خیال رہے کہ اس معاملہ میں عدالت بی ایم سی سے یہ بھی دریافت کر چکی ہے کہ آبادی کے لحاظ سے قبرستان کے لئے جگہ فراہم کرنے کے متعلق شہری انتظامیہ کی کیا پالیسی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز