آبروریزی کی شکار سولہ سالہ لڑکی کو بامبے ہائی کورٹ نے نہیں دی اسقاط حمل کی اجازت

ممبئی۔ بامبے ہائی کورٹ نے کل یہاں 16سالہ آبروریزی کی متاثر کو اسقاط حمل کی اجازت نہیں دی جوکہ بیس ہفتے کی حاملہ ہے ،عدالت نے ڈاکٹروں کے ایک پینل کی رپورٹ کی بنیاد پر یہ حکم دیا ہے۔

Oct 14, 2017 09:57 AM IST | Updated on: Oct 14, 2017 09:57 AM IST

ممبئی۔ بامبے ہائی کورٹ نے کل  یہاں 16سالہ آبروریزی کی متاثر کو اسقاط حمل کی اجازت نہیں دی جوکہ بیس ہفتے کی حاملہ ہے ،عدالت نے ڈاکٹروں کے ایک پینل کی رپورٹ کی بنیاد پر یہ حکم دیا ہے۔ جسٹس رنجیت مورے کی سربراہی میں ایک بینچ نے لڑکی کے والد کی عرضداشت کو مسترد کردیا ،جنہوں نے لڑکی کی جانب سے اسقاط حمل کا مطالبہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ ممبئی کے مشہور سرکاری کے ای ایم اسپتال اور جی ایس میڈیکل کالج کے ڈاکٹروں پر مشتمل پینل نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ اگر اس موقع پر اسقاط حمل کیا گیا تو لڑکی کی جان کے لیے خطرہ پیدا ہوجائے گا۔ مذکورہ پینل میں آٹھ ڈاکٹر تھے اور انہوں نے لڑکی کا طبّی جائزہ لینے کے بعد جمعرات کو رپورٹ پیش کی ۔

آبروریزی کی شکار سولہ سالہ لڑکی کو بامبے ہائی کورٹ نے نہیں دی اسقاط حمل کی اجازت

علامتی تصویر

لڑکی کے والد نے دعویٰ کیا تھا کہ حمل کی وجہ سے لڑکی کی صحت کو نقصان پہنچ سکتا ہے اور اسے چوٹ لگ سکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ لڑکی کی صحت بہتر نہیں ہے، کیونکہ اسے اینیما ہوگیا ہے ،جس کے سبب خون میں کمی واقع ہوئی ہے۔جبکہ عصمت دری کی وجہ سے ٹہرجانے والے حمل سے بھی وہ ذہنی اور جسمانی اذیت کا شکار ہے۔  سماعت کے دوران لڑکی کے وکیل نے دستور کے تحت لڑکی کے حقوق کا حوالہ دیا اور دلیل پیش کی کہ لڑکی کو اس بات کا حق حاصل ہے کہ وہ ایک نابالغ ہوتے ہوئے بچے کی پیدائش کرے ۔

عدالت نے واضح طورپر پر کہا کہ وہ طبّی ماہرین کے مشورے کے خلاف نہیں جا سکتی ہے کیونکہ 20ہفتے کے حمل کا اسقاط کرنے کے نتیجے میں ماں کی زندگی کو خطرہ پیدا ہوسکتا ہے۔ ڈاکٹر کے پینل کا کہنا ہے کہ اگر لڑکی حمل کی اپنی مدت مکمل کرتی ہے تو اس کی زندگی کو کسی قسم کا کوئی خطرہ نہیں ہوگا۔ پینل نے یہ بھی مشورہ دیا ہے کہ اگر لڑکی اور اس کا خاندان بچے کی پرورش کے حق میں نہیں ہے تو وہ اسے کسی کو گود دے سکتا ہے۔

Loading...

واضح رہے کہ تھانے پولیس میں درج شدہ شکایت کے مطابق امسال اگست میں ایک مقامی ڈیلیوری بوائے نے لڑکی سے شادی کا وعدہ کرکے اس سے جنسی تعلقات بنائے تھے۔ لیکن بعد میں ملزم لڑکا فرار ہوگیا اور چیک اپ کے بعد لڑکی کے حاملہ ہونے کا پتہ چلا ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز