آدرش سوسائٹی گھوٹالہ میں اشوک چوہان کو ہائی کورٹ سے بڑی راحت ، نہیں چلے گا مقدمہ

ممبئی ہائی کورٹ نے آدرش ہاوسنگ سوسائٹی گھوٹالہ میں معاملہ میں سابق وزیر اعلی اشوک چوہان کے خلا ف مقدمہ چلانے کیلئے مہاراشٹر کے گورنر کی منظوری کو رد کردیا ہے ۔

Dec 22, 2017 02:26 PM IST | Updated on: Dec 22, 2017 02:26 PM IST

ممبئی : ممبئی ہائی کورٹ نے آدرش ہاوسنگ سوسائٹی گھوٹالہ میں معاملہ میں سابق وزیر اعلی اشوک چوہان کے خلا ف مقدمہ چلانے کیلئے مہاراشٹر کے گورنر کی منظوری کو رد کردیا ہے ۔ اب چوہان کے خلاف کوئی مقدمہ نہیں چلے گا۔ خیال رہے کہ سال رواں جنوری میں سی بی آئی نے گورنر ودیا ساگر راو کو خط لکھ کر آدرش گھوٹالہ میں اشوک چوہان کے خلاف مقدمہ چلانے کی اجازت طلب تھی ، جس کے بعد گورنر نے مارچ میں چوہان کے خلاف کیس چلانے کیااجازت دیدی تھی۔

سی بی آئی نے اشوک چوہان سمیت 13 افراد کے خلاف اس سلسلہ میں چارچ شیٹ داخل کی تھی ۔ ایجنسی نے اپنی چارج شیٹ کے ساتھ دو رکنی جانچ کمیشن کی رپورٹ کے علاوہ ممبئی ہائی کورٹ کے ان تبصروں کو بھی منسلک کیا گیا ، جو 2014 میں داخل ایک عرضی پر کئے گئے تھے ۔ جانچ کمیشن میں جسٹس جے اے پاٹل (ریٹائرڈ ) اور سابق چیف سکریٹری پی سبرامنیم شامل تھے ۔

آدرش سوسائٹی گھوٹالہ میں اشوک چوہان کو ہائی کورٹ سے بڑی راحت ، نہیں چلے گا مقدمہ

بعدا زاں راو نے آدرش ہاوسنگ سوسائٹی کیس میں چوہان کے خلاف سی آر پی سی کی دفعہ 197 اور آئی پی سی کی دفعہ 120 بی اور 420 کے تحت مقدمہ چلانے کی اجازت دی تھی ۔ گزشتہ ماہ ماہ وزیر اعلی فرنویس کی صدرات میں مہاراشٹر کابینہ کی میٹنگ کے بعد مقدمہ چلانے کا فیصلہ کیا گیا تھا اور حکومت نے اس بابات گورنر کو بھی اپنی رپورٹ پیش کردی تھی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز