دیوالی کے موقع مہاراشٹر میں بس کی ہڑتال سے مسافروں کو کافی پریشانیوں کا سامنا

مہا راشٹر میں سرکاری بسوں کی ہڑتال سے یکایک سرکارکے ہاتھ پاؤں پھول گئے ہیں۔

Oct 17, 2017 09:37 PM IST | Updated on: Oct 17, 2017 09:37 PM IST

مالیگاؤں : مہا راشٹر میں سرکاری بسوں کی ہڑتال سے یکایک سرکارکے ہاتھ پاؤں پھول گئے ہیں۔ جہاں عام طور سے دیوالی کے دنوں میں ڈرائیورس اور کنڈکٹروں کی چھٹیا ں بھیڑ کی وجہ سے رد کر دی جاتی ہیں وہیں اگر پورا اسٹاف ہی ہڑتال پر چلا جائے تو سوچئے کیا ہوگا ۔

مہاراشٹر کا ایس ٹی مہا منڈل جس میں لاکھوں کنڈیکٹر اور ڈرائیور بہت کم تنخواہ پر برسوں سے کام کررہے ہیں۔ ان کا مطالبہ ہے کہ انہیں ساتواں پے کمیشن کا فائدہ دیا جائے ۔ اس مطالبے کو لے کر 16 تاریخ کی رات سے پورے مہاراشٹر کے ایس ٹی ڈرائیور اور کنڈیکٹر ہڑتال پر چلے گئے ہیں۔

دیوالی کے موقع مہاراشٹر میں بس کی ہڑتال سے مسافروں کو کافی پریشانیوں کا سامنا

دیوالی جیسے تہوار کے موقع پر ان ڈرائیور اور کنڈیکٹروں کی ہڑتال سے عام آدمی کو کافی تکلیفوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ اسکولوں میں دیوالی کی چھٹیاں ہونے کی وجہ سے لوگوں کی آمد و رفت بڑھ گئی ہے۔ ایسے میں بس کی ہڑتال ہونے سے پریشانی اٹھانی پڑرہی ہے۔

مالیگاؤں شہر کے سینٹرل بس اسٹاپ پر دن بھر میں پانچ سو سے زیادہ بسیں مہاراشٹر اوردیگر ریاستوں کے لئے روانہ ہوتی ہیں۔ ہڑتال کی وجہ سے آج صبح سے ایک بھی بس روانہ نہیں ہوسکی۔ ڈرائیوروں اور کنڈیکٹروں کی سبھی یونین اس ہڑتال میں شامل ہیں۔ صرف شیوسینا کی یونین الگ ہوگئی ہے۔ جبکہ بی جے پی کے لیڈران نے بھی اس ہڑتال کی حمایت کی ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز