فلم پدما وتی تنازع : سینسر بورڈ کا بھنسالی پر غداری کا معاملہ درج کرنے کا مطالبہ ، دیپیکا کی سیکورٹی بڑھی

فلم پدماوتی کو لے کر جاری احتجاج اور مخالفت کے درمیان ریاستی حکومت نے واضح طور پر کہا ہے کہ کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں ہے

Nov 17, 2017 08:24 PM IST | Updated on: Nov 17, 2017 08:24 PM IST

نئی دہلی : فلم پدماوتی کو لے کر جاری احتجاج اور مخالفت کے درمیان ریاستی حکومت نے واضح طور پر کہا ہے کہ کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ حکومت نے پرڈیوسر ، ڈائریکٹر سے لے کر فلم سے وابستہ سبھی اداکاروں کو بھی سیکورٹی فراہم کرنے کی بات کہی ہے ۔ فلم میں رانی پدماوتی کا کردار ادا کرنے والی معروف اداکارہ دیپیکا پڈوکون کی سیکورٹی میں بھی اضافہ کردیا گیا ہے۔

جب سے کرنی سینا نے دیپیکا پر حملہ کی دھمکی دی ہے ، تب سے ہی دیپیکا کے گھر آنے جانے والے سبھی افراد سے سخت پوچھ گچھ کی جارہی ہے ۔ پولیس اس پورے معاملہ کو لے کر کافی محتاط ہے اور کسی بھی قسم کی لاپرائی یا غلطی برتنا نہیں چاہتی ہے۔ ریاستی حکومت کا کہنا ہے کہ فلم ریلیز ہونے یا نہ ہونے کا فیصلہ سینسر بورڈ کے ہاتھ میں ہے ، لیکن اسے لے کر سیکورٹی بندوبست کرنا ہمارا کام ہے ۔ ریاستی وزیر داخلہ کا کہناہے کہ حکومت سبھی کی سیکورٹی کا بندوبست کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

فلم پدما وتی تنازع : سینسر بورڈ کا بھنسالی پر غداری کا معاملہ درج کرنے کا مطالبہ ، دیپیکا کی سیکورٹی بڑھی

اسی درمیان یہ خبر بھی آرہی ہے کہ سینسر بورڈ کے ہی ایک رکن ارجن گپتا نے وزارت داخلہ کو ایک خط لکھا ہے ، جس میں ڈائریکٹر بھنسالی کے خلاف غداری کا کیس درج کرنے کی بات کہی گئی ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز